13

حکومت کا ماٹو ہے لوٹو اور بھاگو: شہباز شریف

حکومت کا ماٹو ہے لوٹو اور بھاگو: شہباز شریف

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (نواز) پی ایم ایل این کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا کہ موجودہ حکومت کا نعرہ ہے: ’’لوٹ لو پھر بھاگو۔‘‘ انہوں نے حکومت کے دسمبر سے مہنگائی کا ایک اور سونامی لانے کے منصوبے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت 24NewsHD ٹی وی چینل نے رپورٹ کیا کہ آئی ایم ایف کی شرائط پر پاکستان کی معاشی خودمختاری کا وعدہ کیا ہے۔

بدھ کو جاری ہونے والے ایک بیان میں شہباز شریف نے آئندہ ماہ اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافے کے حکومتی منصوبے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ملکی معیشت کو تباہ کر کے غریبوں کو کنگال کر دیا ہے۔

انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ حکومت ادویات، خوراک، بجلی اور گیس سمیت ہر چیز پر ٹیکس لگا رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوکریاں اور ذریعہ معاش ختم ہو رہے ہیں، جبکہ اس ‘نئے پاکستان’ میں ٹیکس بڑھ رہے ہیں۔

ملک میں گیس اور بجلی نہیں ہے اور آٹا، چینی، گھی اور دیگر چیزوں کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں۔ لیکن قیمتوں اور ٹیکسوں میں اضافے کے باوجود ہمارا قرضہ بڑھ رہا ہے،‘‘ انہوں نے حکومت پر تنقید کی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے آئی ایم ایف کی شرائط پر عمل کرتے ہوئے پاکستان کی معاشی خودمختاری کا وعدہ کیا تھا۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ ملکی قرضہ تاریخ کی بلندی پر پہنچ گیا لیکن نہ عوام کو کچھ ملا اور نہ ہی ملکی حالت میں کوئی بہتری نظر آئی۔ جولائی سے اکتوبر کے درمیانی عرصے میں غیر ملکی قرضوں میں حیران کن طور پر 18 فیصد اضافہ ہوا۔ حکومت نے گزشتہ سال کے مقابلے میں 580 ملین ڈالر کے زیادہ قرضے لیے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر حکومت اسٹیٹ بینک آف پاکستان سے قرضے حاصل نہ کرسکی تو اس کی صورت حال سنگین ہوگی۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ حکومت نے آئی ایم ایف کی ہدایت پر مرکزی بینک کو خود مختاری دینے کی نئی قانون سازی کی ہے۔

شہباز شریف نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ موجودہ حکومت چلی جائے گی لیکن یہ پاکستان کو اس بری معاشی دلدل میں پھنسا دے گی کہ ملک کا اس سے نکلنا مشکل ہو جائے گا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں