13

پی ٹی آئی نے وزیراعلیٰ سندھ کے ‘متعصبانہ’ بیان کے خلاف سندھ اسمبلی میں قرارداد جمع کرادی

پی ٹی آئی نے وزیراعلیٰ سندھ کے 'متعصبانہ' بیان کے خلاف سندھ اسمبلی میں قرارداد جمع کرادی

کراچی: پاکستان تحریک انصاف نے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کے مبینہ متعصبانہ بیان کے خلاف سندھ اسمبلی میں قرارداد جمع کرادی۔

قرارداد ایم پی اے خرم شیر زمان، بلال غفار، جمال صدیقی، ڈاکٹر عمران علی شاہ، راجہ اظہر، شہزاد قریشی اور ڈاکٹر سیما ضیاء نے سیکرٹری پی اے کے دفتر میں جمع کرائی۔

اپوزیشن قانون سازوں نے قرارداد میں دعویٰ کیا کہ صوبائی چیف ایگزیکٹو نے صوبائی اسمبلی میں تقریر کی جو کہ ریاست پاکستان کے خلاف تھی۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے ‘ارکان کو ایوان سے باہر پھینکو’ کا جملہ استعمال کیا۔ ہم وزیراعلیٰ سے اپنی نفرت انگیز تقریر واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ وزیر اعلیٰ کو اپنے متعصبانہ اور نفرت انگیز بیان پر معافی مانگنی چاہیے۔

زمان نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) سندھ میں برسراقتدار ہے، اس لیے ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپوزیشن کو اعتماد میں لیں۔ انہوں نے ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ سندھ حکومت کو کوئی بھی قانون لانے سے پہلے اپوزیشن سے بات کرنی چاہیے تھی۔

انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اپوزیشن کو احتجاج پر اکسایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں میں ایسا احتجاج کبھی نہیں ہوا، قانون ساز نے دعویٰ کیا کہ آج تمام جمہوریت پسند صرف سیاسی جماعتیں نہیں بلکہ پیپلز پارٹی کے خلاف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لوکل گورنمنٹ ترمیمی بل کو تمام اسٹیک ہولڈرز نے مسترد کر دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’نہ صرف ہم بلکہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے ارکان نے بھی اسے کالا قانون قرار دیا ہے۔‘‘

انہوں نے دعویٰ کیا کہ سندھ حکومت صرف پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے مسائل حل کرنا چاہتی ہے۔ زمان نے کہا، “پی پی پی کے رہنما روز بروز ارب پتی بن رہے ہیں، جبکہ سندھ کے بچے تھر میں بھوک اور غربت سے مر رہے ہیں۔”

تعلیم اور صحت کا نظام تباہ ہو چکا ہے۔ پیپلز پارٹی کا واحد ایجنڈا نفرت پھیلانا ہے۔ پیپلز پارٹی سندھ کے لیے کینسر بن چکی ہے۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان سے کہا گیا ہے کہ وہ سندھ کے لیے آئینی اقدامات کریں۔ الیکشن سے پہلے سندھ کو تباہ کر دیں گے۔ ہمیں وزیراعظم کی ٹیم پر اعتماد ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ پاکستان آگے بڑھے گا۔

یہ چور عمران خان کا مقابلہ نہیں کر سکتا۔ ہم سندھ میں رو رہے ہیں۔ ہماری زندگی مشکل ہو گئی ہے۔ ہم سمجھ چکے ہیں کہ سندھ کے لوگ ان سے جان چھڑانا چاہتے ہیں۔

وزیراعلیٰ کی تقریر کے حوالے سے زمان نے کہا کہ یہ بہت شرمناک ہے۔ یہ تقریر سندھ میں لسانی منافرت پھیلانے کا ایجنڈا ہے۔ مراد علی شاہ اپنے مذموم سیاسی مقاصد کے لیے سندھ کی تاریخی قرارداد کو متنازعہ بنا رہے ہیں۔

PA میں پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی کے رہنما غفار نے بھی وزیراعلیٰ کے بیان کی مذمت کی۔ وزیر اعلیٰ کہتے ہیں کہ اپوزیشن جاہل ہے لیکن ہم جاہل نہیں ہیں۔ ہم ان کی حکومت کی کرپشن کو بے نقاب کر سکتے ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں