19

کے پی کے بلدیاتی انتخابات میں جے یو آئی (ف) بہت آگے

کے پی کے بلدیاتی انتخابات میں ووٹنگ ختم ہونے کے بعد ای سی پی کے اہلکار بیلٹ پیپرز کی گنتی کر رہے ہیں۔  فائل فوٹو
کے پی کے بلدیاتی انتخابات میں ووٹنگ ختم ہونے کے بعد ای سی پی کے اہلکار بیلٹ پیپرز کی گنتی کر رہے ہیں۔ فائل فوٹو

پشاور: عارضی نتائج کے مطابق جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی ایف) خیبرپختونخوا کے 17 اضلاع میں سے بیشتر میں بلدیاتی انتخابات میں آگے ہے۔

فضل کی قیادت والی جماعت نے پشاور، کوہاٹ اور بنوں میں میئر کے عہدے حاصل کر لیے ہیں۔ مجموعی طور پر پارٹی اب تک 18 سیٹوں کے ساتھ حریفوں سے بہت آگے ہے۔ پشاور کے میٹروپولیٹن سٹی میں جے یو آئی (ف) برتری پر ہے جہاں اس کے امیدوار فیاض علی نے 62 ہزار 388 ووٹ حاصل کیے ہیں۔

جے یو آئی ایف کے فرید اللہ، کلیم اللہ، ٹیلہ محمد اور محمد ہارون نے پشاور کی تحصیل متھرل، شاہ عالم، بڈھ بیر اور پشتخرہ میں کامیابی حاصل کی ہے۔ جے یو آئی ایف کے عرفان درانی بنوں سٹی کونسل اور ایک اور امیدوار مستو خان ​​ضلع بنوں کی تحصیل وزیر سے جیت گئے۔

جے یو آئی (ف) کے صدام حسین نے تحصیل ٹانک جبکہ بہادر خان کو جنڈولہ ضلع ٹانک کی تحصیل ملی ہے۔ عبوری نتائج کے مطابق جے یو آئی ف کے شیر زمان تحصیل کونسل کوہاٹ کے میئر منتخب ہو گئے۔

جے یو آئی ف کے عمران محمد نے ضلع ہنگو میں تھل تحصیل چیئرمین کا عہدہ جیت لیا ہے۔ مہمند کی تحصیل بائیزئی میں جے یو آئی ف کے بسم اللہ جان، چارسدہ تحصیل کونسل میں عبدالرؤف اور حمزہ آصف ضلع چارسدہ میں تحصیل شبقدر کے چیئرمین منتخب ہو گئے۔

جے یو آئی (ف) کے مبارک احمد نے تحصیل رستم چیئرمین، تحصیل محمد سعید تخت بھائی اور ضلع مردان کی تحصیل حمد اللہ کاٹلنگ کی نشست جیت لی ہے۔ علاوہ ازیں ضلع صوابی کے ٹوپی میں فضل کی زیرقیادت پارٹی کے محمد رحیم نے تحصیل چیئرمین کی نشست جیت لی ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ مولانا فضل الرحمان کے آبائی شہر ڈیرہ اسماعیل خان میں جے یو آئی (ف) کوئی نشست نہیں جیت سکی۔ حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے بونیر کی پانچ میں سے چار تحصیلوں پر کامیابی حاصل کی ہے۔

روزی خان ڈگر، سالار جہاں گاگرہ، شیر عالم گدیزئی اور شریف خان چغرزئی سے کامیاب ہوئے ہیں۔ صوابی تحصیل کونسل میں تحریک انصاف کے عطاء اللہ خان کامیاب ہو گئے۔ تحریک انصاف کے نوید احمد نے لوئر مہمند تحصیل کونسل لے لی ہے۔

عبوری نتائج کے مطابق پشاور کی تحصیل حسن خیل سے پی ٹی آئی کے حفیظ الرحمان کامیاب ہو گئے ہیں۔ اس کے علاوہ پی ٹی آئی کے جنید رشید نے بنوں کی تحصیل ککی، تحصیل کوہاٹ کی تحصیل ساجد اقبال گمبٹ اور ڈی آئی کے میں تحصیل آریز خان کلاچی سے کامیابی حاصل کی ہے۔

نوشہرہ تحصیل کونسل میں تحریک انصاف کے اسحاق خٹک اور ضلع نوشہرہ کی تحصیل کونسل جہانگیرہ میں کامران رازق کامیاب ہوئے ہیں۔

اے این پی کے حمایت اللہ مایار نے مردان تحصیل کونسل کے چیئرمین اور بختاور خان نے مردان ضلع کی گڑھی کپوتہ کی تحصیل کونسل جیت لی ہے۔

اے این پی کے نصید خان بونیر کی تحصیل کونسل منڈان جبکہ غلام حقانی صوابی کی تحصیل رزڑ سے منتخب ہوئے ہیں۔

اے این پی کے ارباب عمر خان پشاور کی چمکنی تحصیل کونسل اور غیور علی خان نوشہرہ کی تحصیل پبی سے منتخب ہوئے ہیں۔

صوابی کی تحصیل لاہور سے پاکستان مسلم لیگ نواز کے امیدوار عادل خان جیت گئے ہیں، ہارون سکندر اور قاسم شاہ ہری پور کی تحصیل خانپور اور غازی سے منتخب ہوئے ہیں۔

صوبے کے 17 اضلاع کی مختلف تحصیلوں میں دیگر جماعتوں کے امیدواروں کے ساتھ ساتھ آزاد امیدواروں نے بھی کامیابی حاصل کی ہے۔ کچھ نتائج کا ابھی بھی انتظار ہے۔

بنوں میں ڈیرہ اسماعیل خان اور بکا خیل کی سٹی کونسلوں کے انتخابات ملتوی کر دیے گئے ہیں۔ امن و امان کے باعث پشاور سٹی کونسل کے چھ سٹیشنز پر پولنگ ملتوی کر دی گئی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں