9

افغان وزیر نے سابق حکومت کو بدعنوانی، نااہلی کا ذمہ دار ٹھہرایا

افغان وزیر نے سابق حکومت کو بدعنوانی، نااہلی کا ذمہ دار ٹھہرایا

کابل: عبداللطیف نظری، جنہیں معیشت کا نائب وزیر مقرر کیا گیا تھا، نے کہا کہ سابق حکومت کے بیشتر محکموں میں بدعنوانی کی موجودگی نے افغانستان کی معیشت کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا۔ عبداللطیف نظری کا تعارف کرانے کے لیے وزارت اقتصادیات میں منعقدہ تقریب میں انہوں نے معیشت سے منسلک انتظامیہ کی سابقہ ​​قیادت کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا کہ سابق حکومت کے دور میں بیشتر محکموں میں بڑے پیمانے پر کرپشن موجود تھی۔

تقریب میں نظری نے کہا کہ ’’زیادہ تر مسائل پچھلی حکومت سے ورثے میں ملے ہیں، اگر ہم انصاف سے جائزہ لیں تو کرپشن کی وجہ سے اربوں ڈالر کا غلط استعمال ہوا‘‘۔ امارت اسلامیہ کے عہدیداروں نے کہا کہ نظری کی تقرری ایک جامع حکومت کی تشکیل کی جانب ایک قدم ہے، جس کا عالمی برادری نے مطالبہ کیا ہے۔

قائم مقام وزیر اقتصادیات قاری دین محمد حنیف نے کہا کہ وزارت کو پیشہ ور شخصیات اور ایسے لوگوں کی ضرورت ہے جو بدعنوان نہ ہوں۔ “وزارت معیشت وہ جگہ ہے جہاں اسے پیشہ ور اور تکنیکی افراد کی ضرورت ہوتی ہے۔ ہم یہاں پیشہ ور چہروں کو بھرتی کرنے کی کوشش کرتے ہیں،‘‘ قاری دین محمد حنیف نے کہا۔ عبداللطیف نظری نے ایرانی یونیورسٹی سے سیاسیات میں پی ایچ ڈی کی ہے۔ –

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں