13

نواز کی واپسی پر تھوک جاری

کراچی / اسلام آباد: نواز شریف کی وطن واپسی پر تنازع جاری ہے، وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے اتوار کو کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اٹارنی جنرل فار پاکستان (اے جی پی) کو ہدایت کی ہے کہ وہ پی ایم ایل این کے سپریمو کو واپس لانے کو یقینی بنائیں۔ ابتدائی.

کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یا تو شہباز شریف نواز کو پاکستان واپس آنے کے لیے کہیں یا اس حوالے سے جعلی حلف نامہ دینے پر ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو واپس لانے کے معاملے کو آگے بڑھانے سے پہلے شہباز شریف کے خلاف ان کے بھائی کی ضمانت کے طور پر جعلی حلف نامہ جمع کرانے پر مقدمہ درج کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ لاہور ہائی کورٹ کو از خود نوٹس لینا چاہیے اور شہباز شریف کو نواز شریف کی وطن واپسی یقینی بنانے کا حکم دینا چاہیے۔

معیشت کے بارے میں فواد نے کہا کہ پاکستان اگلے 5 سالوں میں 55 ارب ڈالر قرض دینے والوں کو واپس کرنے کا پابند ہے، انہوں نے مزید کہا کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کو خود مختاری دینا ملک کے بہترین مفاد میں ہے۔

ایک سوال کے جواب میں فواد نے کہا کہ حکومت فنانس (ضمنی) بل 2021 کو 20 جنوری تک منظور کروا لے گی۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کی دانشمندانہ معاشی پالیسیوں کی وجہ سے پاکستان میں معاشی استحکام لوٹ رہا ہے اور کہا کہ اس پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔ زرعی شعبے کو دیا گیا جبکہ پانچ فصلوں میں ریکارڈ پیداوار حاصل کی گئی۔

فواد چوہدری نے کہا کہ 2022 ملکی ترقی اور معاشی استحکام کا سال ہو گا۔ وہ کراچی میں پی ٹی آئی رہنما عالمگیر خان سے ان کے والد دلاور خان کے انتقال پر تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔

فواد نے کہا کہ بین الاقوامی مارکیٹ میں قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے پاکستان میں اشیاء کے نرخ بڑھ گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں زراعت کے شعبے کو پچھلی حکومتوں نے نظر انداز کیا تھا لیکن پی ٹی آئی حکومت نے اس شعبے کو فروغ دینے کے لیے خصوصی اقدامات کیے تھے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ رواں مالی سال میں ملک کی 100 کمپنیوں نے 929 ارب روپے کا منافع کمایا اور میڈیا ہاؤسز نے اپنے منافع میں 33 سے 40 فیصد اضافے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے میڈیا ہاؤسز نے بھاری منافع کے باوجود اپنے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہیں کیا۔ انہوں نے نجی شعبے پر زور دیا کہ وہ اپنے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کریں۔

مسلم لیگ ن کے رہنما مفتاح اسماعیل پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کی اپنی کمپنی نے بھی بہت زیادہ منافع کمایا لیکن وہ پھر بھی حکومت کی مذمت کر رہے ہیں۔ انہوں نے اتنا زیادہ منافع کمانے پر انہیں مبارکباد بھی دی۔

اتحادی شراکت داروں کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کابینہ میں متحدہ قومی موومنٹ پاکستان اور پاکستان مسلم لیگ (قائد) کے وزراء نے فنانس بل کی منظوری دے دی۔ فواد کی پریس کانفرنس کے بعد پی ایم ایل این کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا کہ پی ٹی آئی کی قیادت والی حکومت “نواز شریف فوبیا” میں مبتلا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت صرف نواز شریف پر بات کرنے کے لیے کابینہ کے اجلاس منعقد کرتی ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ نواز شریف فوبیا میں مبتلا ہے۔

احسن نے کہا کہ نیا سال نئے انتخابات کا سال ہوگا کیونکہ اب دھاندلی کے ذریعے اقتدار میں آنے والی حکومت کو پیکنگ بھیجنے کا وقت آگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کے ریٹائرڈ ہرٹ ہونے کا وقت آگیا ہے۔ دریں اثنا، پی ایم ایل این کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا کہ “نواز شریف ملک کی عدلیہ سے اجازت لینے کے بعد علاج کے لیے بیرون ملک گئے تھے”۔

انہوں نے کہا، “نواز صرف ڈاکٹر کے مشورے پر اپنا علاج مکمل کرنے کے بعد پاکستان واپس آئیں گے۔” مریم نے مزید کہا کہ نواز اور شہباز کے خلاف روزانہ کی بنیاد پر بیان جاری کرنا ظاہر کرتا ہے کہ حکومت کتنی خوفزدہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو میڈیا پر شور مچانا نہیں چاہیے اور وہ پی ایم ایل این کی قیادت کے خلاف جو کچھ کرنا چاہتی ہے وہ کرے۔

انہوں نے کہا کہ اٹارنی جنرل کو نواز کی پاکستان واپسی کو یقینی بنانے کے لیے کہنے کے بجائے حکومت انہیں گندم، چینی، بجلی، گیس اور ادویات چوری کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کرے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو بجائے اس کے کہ وہ اٹارنی جنرل کو منی لانڈرنگ، بدعنوانی اور عوام پر مہنگائی کی لعنت لانے والوں کے خلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کرے۔

دریں اثناء سعودی عرب حکومت کے سینئر مشیر ڈاکٹر علی عواد اسیری نے لندن میں پی ایم ایل این کے سپریمو نواز شریف سے ملاقات کی اور مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ نجی میڈیا ذرائع کے مطابق دورہ کرنے والے عہدیدار نے نواز شریف سے ان کی صحت کے بارے میں پوچھا اور ان سے پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات پر تبادلہ خیال کیا۔ ذرائع نے بتایا کہ نواز شریف نے سعودی عہدیدار کو موجودہ حکومت پاکستان سے متعلق امور سے بھی آگاہ کیا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں