15

موسلا دھار بارش سے بلوچستان کے نشیبی علاقے زیر آب آگئے۔

موسلا دھار بارش سے بلوچستان کے نشیبی علاقے زیر آب آگئے۔

گوادر: صوبے کے مختلف علاقوں میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری رہنے سے گوادر سمیت بلوچستان کے نشیبی علاقے زیرآب آگئے، یہ بات منگل کو جیو نیوز نے رپورٹ کی۔

پاکستان میٹرولوجیکل ڈیپارٹمنٹ (پی ایم ڈی) کے مطابق، گوادر میں 57.2 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی، ضلع میں گرج چمک کے ساتھ بارش نے مواصلاتی نظام کو بری طرح متاثر کیا۔ پی ایم ڈی نے کہا کہ ضلع میں مزید بارش کی توقع ہے۔

گوادر کے علاوہ پسنی میں سب سے زیادہ 70 ملی میٹر، اورماڑہ میں 27 ملی میٹر، کیچ اور جیوانی میں 24 ملی میٹر، کوئٹہ میں 8 ملی میٹر جب کہ خضدار، دالبندین اور پنجگور میں 3 ملی میٹر بارش ہوئی۔

محکمہ موسمیات نے پہلے ہی شمالی بلوچستان میں تیز ہواؤں کے مغربی موسمی نظام کی پیش گوئی کی تھی جس سے صوبے کے مختلف علاقوں میں موسلادھار بارش ہوئی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق گزشتہ دو روز سے جاری موسلادھار بارش کے باعث گوادر اور تربت کے نشیبی علاقے زیر آب آگئے ہیں۔ فوج کے میڈیا ونگ کی طرف سے ایک بیان میں کہا گیا، “ان علاقوں میں مقامی آبادی اور سیاحوں کے لیے جما ہوا پانی انتہائی مشکلات کا باعث بن رہا ہے۔”

فوجی دستوں نے فوری طور پر بچاؤ اور امدادی سرگرمیوں میں سول انتظامیہ کی مدد کی جس میں مختلف علاقوں میں پانی بھرنے اور پھنسے ہوئے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنا شامل ہے۔ اس دوران کوسٹل ہائی وے، پسنی، سوربندر، نگور اور جیوانی کے علاقوں میں خوراک اور رہائش فراہم کی گئی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں