9

ایران نے ٹھوس ایندھن والے سیٹلائٹ بردار راکٹ کا تجربہ کیا۔

تہران: ایران کے پاسداران انقلاب نے گزشتہ ہفتے ٹھوس ایندھن والے سیٹلائٹ بردار راکٹ کا تجربہ کیا، سرکاری میڈیا نے فورس کے ایرو اسپیس کمانڈر کے حوالے سے بتایا ہے۔ رپورٹوں میں ایلیٹ فورس کی طرف سے جاری کی گئی فوٹیج کو دکھایا گیا ہے جس میں راکٹ کے پرائمری پروپلشن انجن کا کامیاب تجربہ ظاہر کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے۔ گارڈز کے ایرو اسپیس کمانڈر بریگیڈیئر جنرل امیر علی حاجی زادہ نے جمعرات کو کہا کہ تجربہ پہلی بار ایران نے مائع ایندھن کے بجائے ٹھوس ایندھن والے راکٹ کا استعمال کیا۔

انہوں نے کہا کہ ایران اب مزید سیٹلائٹ خلا میں بھیج سکتا ہے۔ ٹھوس ایندھن والے راکٹ موبائل لانچروں کے لیے استعمال کیے جا سکتے ہیں جبکہ خالص ٹھوس ایندھن والے راکٹ زیادہ تر بیلسٹک میزائل سسٹم سے منسلک ہوتے ہیں۔ “نئے ایرانی سیٹلائٹس غیر دھاتی، غیر متحرک پروپیلنٹ کے ساتھ مرکب جسموں سے بنے ہیں، جو راکٹ کی توانائی میں مزید اضافہ کریں گے اور اخراجات کو بچائیں گے۔”

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں