8

پی ٹی آئی، ایم کیو ایم اور جی ڈی اے آج مشترکہ احتجاج کریں گے۔

سندھ ایل جی بل: پی ٹی آئی، ایم کیو ایم اور جی ڈی اے آج مشترکہ احتجاج کریں گے۔

کراچی: سندھ اسمبلی کی دو بڑی اپوزیشن جماعتیں اور کئی دیگر اپوزیشن جماعتوں اور افراد کا اتحاد آج فوارہ چوک پر مشترکہ طور پر احتجاج کا اہتمام کرے گا تاکہ سندھ حکومت پر صوبائی اسمبلی سے حال ہی میں منظور کیے گئے متنازع بلدیاتی بل کو واپس لینے کے لیے دباؤ ڈالا جائے۔

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم-پی)، پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) کے رہنماؤں نے جمعہ کو اپنی اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس کے بعد ایک پریس کانفرنس میں اس فیصلے کا اعلان کیا جہاں وہ بھی موجود تھے۔ عندیہ دیا کہ احتجاج سندھ وزیر اعلیٰ ہاؤس کی طرف بڑھ سکتا ہے۔

ایم کیو ایم پی کے ایم پی ایز محمد حسین اور جاوید حنیف، پی ٹی آئی کے ایم پی اے بلال غفار اور جی ڈی اے کے ایم پی اے حسنین مرزا، عارف جتوئی اور سردار عبدالرحیم نے سندھ لوکل گورنمنٹ (ترمیمی) ایکٹ 2021 کے خلاف موثر ایجی ٹیشن پر تبادلہ خیال کے لیے اجلاس میں شرکت کی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اپوزیشن رہنماؤں نے کہا کہ تینوں سیاسی جماعتیں اپنی مشترکہ جدوجہد کے ذریعے پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی زیر قیادت سندھ حکومت کو ‘عوام مخالف’ بل واپس لینے پر مجبور کریں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ صوبے کی تمام بڑی جماعتیں اس بات پر متفق ہیں کہ سندھ حکومت نے ترمیم شدہ بلدیاتی قانون کے ذریعے عوام کے حقوق چھین لیے ہیں۔ ایم کیو ایم پی کے رہنما حسین نے کہا کہ ہم لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 اور اس میں ترامیم کی واپسی تک خاموش نہیں رہیں گے اور ہم دیگر تمام سیاسی جماعتوں سے رابطہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت نے متنازع قانون سازی کے ذریعے بلدیاتی اداروں کے تمام اختیارات چھین لیے ہیں لہٰذا اس قانون کو فوری طور پر ختم کیا جائے۔ جی ڈی اے کے ارباب رحیم نے کہا کہ ان کی پارٹی متنازع لوکل گورنمنٹ بل پر جلد آل پارٹیز کانفرنس بلائے گی۔ انہوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ حکمران پیپلز پارٹی کے کہنے پر پولیس نے حلقہ پی ایس 109 میں اپوزیشن جماعتوں کے کیمپ کو زبردستی ہٹا دیا۔

پی ٹی آئی کے غفار نے کہا کہ ان کی پارٹی کی مرکزی قیادت آج احتجاج میں شرکت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی ایم کیو ایم پی اور جی ڈی اے مل کر سندھ کے باسیوں کو پیپلز پارٹی کی نااہل اور کرپٹ حکومت سے نجات دلائیں گے۔

دریں اثنا، پی ٹی آئی سندھ کے صدر اور وفاقی وزیر علی زیدی کی قیادت میں پی ٹی آئی کی 16 خواتین ایم این ایز کا ایک گروپ ہفتہ کے احتجاج میں شرکت کے لیے اسلام آباد سے جمعہ کو کراچی پہنچا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں