31

پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ عوام کا معاشی قتل: اپوزیشن

پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ عوام کا معاشی قتل: اپوزیشن

اسلام آباد: اپوزیشن رہنماؤں نے پیٹرول کی قیمتوں میں ایک اور اضافے کو عوام کا معاشی قتل قرار دے دیا۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے حکومتی فیصلے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت غریبوں کا معاشی قتل کر رہی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق، انہوں نے کہا، “اس نااہل اور کرپٹ حکومت نے قوم کو مہنگائی کی دلدل میں دھنسا دیا ہے۔” پی ایم ایل این کے صدر نے کہا کہ جب بھی بین الاقوامی مارکیٹ میں پیٹرولیم کی قیمتیں بڑھتی ہیں تو حکومت اس پر فوری رد عمل ظاہر کرتی ہے اور پاکستان میں بھی قیمتیں بڑھا دیتی ہے لیکن جب بین الاقوامی مارکیٹ میں کمی کا رجحان دیکھا گیا تو عوام کو ریلیف دینے کی کبھی زحمت نہیں کی۔

شہباز شریف نے کہا کہ ملک میں تاریخ میں پہلی بار مہنگائی ریکارڈ کی جارہی ہے جب کہ حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے غربت اور بے روزگاری میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ عمران خان نیازی اور ان کی حکومت کی غفلت اور کرپشن کا نتیجہ ہے۔ اس کے علاوہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ قیمتوں میں اضافے کا اثر براہ راست عوام پر پڑے گا۔ انہوں نے پیٹرول کی قیمت میں 3 روپے فی لیٹر اضافے کو عوام کا معاشی قتل قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں 4 روپے فی یونٹ سے زائد اضافے کے بعد اب پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ عوام کا معاشی قتل ہے۔ بلاول نے مزید کہا کہ مہنگائی سے نجات کا واحد حل عمران حکومت کا تختہ الٹنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے ملک کو انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) کے پاس گروی رکھ دیا اور اب پاکستان سے متعلق تمام فیصلے بیرون ملک کیے جا رہے ہیں۔

پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ پیٹرول مہنگا، بجلی مہنگی، گیس مہنگی، عوام کے صبر کا مزید امتحان نہ لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اب پیپلز پارٹی کا لانگ مارچ عوام کو مہنگائی اور معاشی بحران سے بچانے کے لیے ہو گا۔

دریں اثناء پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ 27 فروری سے ملک میں بے مثال مہنگائی پر عمران خان کو عوام کے غصے کا سامنا کرنا پڑے گا۔

انہوں نے پارٹی کی اہم شخصیات سے ملاقات میں کہا کہ بہت ہو چکا ہے اور عوام 27 فروری کو ملک کے کونے کونے سے اسلام آباد کے لیے روانہ ہوں گے تاکہ عمران خان کو بے مثال مہنگائی کا ذمہ دار ٹھہرایا جا سکے۔ 27 فروری سے اسلام آباد لانگ مارچ کی تیاریاں شروع کر دی جائیں گی۔

پیپلز پارٹی کے چیئرمین سے الگ الگ ملاقات کرنے والوں میں انور سیف اللہ خان ممبر سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی، عاصمہ ارباب عالمگیر مرکزی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات پیپلز پارٹی، سید ظاہر شاہ، پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما حاجی دلبر خان، ضلع دیامر سے تعلق رکھنے والے انجینئر نوید خان شامل تھے۔ اقبال، نظام دین، سید امام مالک شاہ اور شیر اللہ۔

وفود سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ نہ صرف بجلی کی قیمتوں میں 4 روپے اضافہ کیا گیا ہے بلکہ پیٹرولیم کی قیمتوں میں بھی 3 روپے سے زائد کا اضافہ کیا گیا ہے جس سے عام آدمی کی کمر ٹوٹ گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی عوام اور ملک کو مہنگائی اور معاشی بحران سے بچانے کے لیے لانگ مارچ کا آغاز کرے گی، انہوں نے مزید کہا کہ مہنگائی اور بیروزگاری کو اب ختم ہونا چاہیے اور اب وقت آگیا ہے کہ عمران خان سے جان چھڑائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے لوگوں کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھا ہوا ہے کیونکہ پاکستان کے فیصلے بیرون ملک ہو رہے ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں