27

پی ایم ایل این کے سینیٹر نے سپریم کورٹ سے فواد چوہدری کے ‘توہین آمیز بیان’ کا نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔

پی ایم ایل این کے سینیٹر نے سپریم کورٹ سے فواد چوہدری کے 'توہین آمیز بیان' کا نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے سینیٹر اعظم نذیر تارڑ نے جمعرات کو سپریم کورٹ سے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کے توہین آمیز بیان کا نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔

تارڑ نے کہا کہ وزیر اطلاعات کا قابل مذمت بیان توہین عدالت کے مترادف ہے جس پر سپریم کورٹ انہیں طلب کرے۔ انہوں نے اس بیان کی شدید مذمت کی اور اسے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی آزادانہ نوعیت کو بدنام کرنے کی مذموم کوشش قرار دیا۔ مقامی میڈیا نے رپورٹ کیا کہ وہ تمام بار ایسوسی ایشنز اور وکلاء پر زور دیتے ہیں کہ وہ اس رویے کی مذمت کریں اور نوٹس لیں۔

اپوزیشن سینیٹر نے کہا کہ سپریم کورٹ میں زیر التوا کیس کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش پاکستان کی عدلیہ کے امیج کو خراب کرنے کی کوشش ہے۔ انہوں نے کہا کہ اداروں، وکلاء پر حملہ تنظیموں پر حملہ کرنے کے مترادف ہے۔ جن کی اپنی کوئی ساکھ نہیں ہے وہ منتخب وکلاء تنظیموں کی ساکھ کو خراب کرنے کی مذموم کوشش کر رہے ہیں۔

تارڑ نے عدالتوں پر زور دیا کہ ایسے افراد کا نوٹس لیا جائے جو عدالتوں اور الیکشن کمیشن میں معافی مانگتے ہیں اور پھر بار بار توہین کا ارتکاب کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اطلاعات توہین آمیز الزامات لگانے کے بجائے سپریم کورٹ جائیں۔ انہوں نے عدلیہ پر بھی زور دیا کہ وہ سپریم کورٹ کو سیاسی رنگ دینے کی اس کوشش کا نوٹس لے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں