17

ایک سال سے عمران سے ملاقات نہیں ہوئی، چوہدری نثار

ایک سال سے عمران سے ملاقات نہیں ہوئی، چوہدری نثار

اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے ان خبروں کی تردید کی ہے کہ انہوں نے وزیراعظم عمران خان سے خفیہ ملاقات کی اور وہ حکمراں جماعت پی ٹی آئی میں شمولیت کے لیے تیار ہیں۔

حزب اختلاف کی سیاسی جماعتوں کی جانب سے وزیر اعظم کے خلاف عدم اعتماد کے ووٹ کے لیے نوٹس جمع کرانے کے بعد چوہدری نثار کا نام دوبارہ سرخیوں میں آ گیا ہے۔ کچھ اطلاعات کے مطابق انہیں پنجاب کا اگلا وزیر اعلیٰ قرار دیا جا رہا ہے، حالانکہ پی ٹی آئی قیادت نے ان خبروں کو مسترد کر دیا تھا۔

لیکن پھر وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ ان کی چوہدری نثار سے ملاقات ہوئی ہے جس سے قیاس آرائیوں میں مزید اضافہ ہو گیا۔

بی بی سی اردو کو دیے گئے ایک حالیہ انٹرویو میں چوہدری نثار نے وضاحت کی کہ وہ گزشتہ تین چار دنوں سے اپنے گاؤں چکری میں ہیں اور مزید پوچھتے ہیں کہ وہ وزیراعظم سے کیسے مل سکتے تھے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ درحقیقت وہ گزشتہ ایک سال میں عمران سے نہیں ملے۔

سابق وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ وہ لوگوں سے چھپ کر نہیں ملتے تھے اور عمران خان ایچی سن کالج کے دوست ہونے کے باوجود ان کی سیاست بہت مختلف تھی۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا وہ 27 مارچ کو اسلام آباد میں ہونے والے پی ٹی آئی کے جلسے میں شرکت کریں گے تو چوہدری نثار نے کہا کہ انہیں کوئی دعوت نامہ موصول نہیں ہوا اور نہ ہی وہ اس میں شرکت کا ارادہ رکھتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ قلیل مدتی فوائد کے لیے پارٹیاں نہیں بدلتے۔

2018 کے الیکشن کے حوالے سے بات کرتے ہوئے چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ چونکہ انہیں پاکستان مسلم لیگ نواز کی جانب سے الیکشن لڑنے کے لیے ٹکٹ نہیں ملا، اس لیے انہوں نے اس کے بعد کسی سیاسی جماعت میں شمولیت اختیار نہیں کی اور نہ ہی انہیں اب کسی میں شمولیت کی جلدی ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں