19

شہباز پی کے ایل آئی میں 50 فیصد مریضوں کا مفت علاج چاہتے ہیں۔

وزیر اعظم شہباز شریف پی کے ایل آئی کا جائزہ اجلاس لے رہے ہیں۔  تصویر: ٹویٹر
وزیر اعظم شہباز شریف پی کے ایل آئی کا جائزہ اجلاس لے رہے ہیں۔ تصویر: ٹویٹر

لاہور: وزیر اعظم شہباز شریف نے پیر کو متعلقہ حکام کو پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ (پی کے ایل آئی) میں کم از کم 50 فیصد مریضوں کا مفت علاج کرنے کی ہدایت کی۔

وزیراعظم نے پی کے ایل آئی سے متعلق امور کا جائزہ لینے کے لیے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے بتایا کہ اس نے گزشتہ سال 290 گردے اور 190 لیور ٹرانسپلانٹس کیے ہیں۔ ان میں سے صرف 17 فیصد کو مفت طبی علاج فراہم کیا گیا۔ وزیراعظم کو ادارے کے انتظامی امور کے ساتھ ساتھ نرسنگ یونیورسٹی کے منصوبے پر بھی بریفنگ دی گئی۔ انہوں نے پی کے ایل آئی منصوبے کی تکمیل میں غفلت پر برہمی کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ پی کے ایل آئی کا مقصد ملک بھر کے غریب لوگوں کو مفت ٹرانسپلانٹ کی خدمات فراہم کرنا ہے تاکہ انہیں بیرون ملک سفر نہ کرنا پڑے۔

پی کے ایل آئی کو ٹرسٹ میں تبدیل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے وزیراعظم نے پنجاب کے چیف سیکرٹری کو ہدایت کی کہ وہ تین دن کے اندر انسٹی ٹیوٹ کو مالی طور پر خود مختار بنانے کے لیے حکمت عملی پیش کریں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’کسی بھی مریض کو محض مالی وجوہات کی بنا پر علاج سے محروم نہیں ہونا چاہیے۔‘‘

انہوں نے مشاہدہ کیا کہ غریب لوگوں کو معیاری صحت کی سہولیات حاصل کرنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور مزید کہا کہ صحت کی مفت سہولیات کی فراہمی ان کی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔ وزیراعظم نے غریب لوگوں کو نظر انداز کرنے کی ذہنیت کو تبدیل کرنے پر بھی زور دیا اور ان کی خدمات کو اولین ترجیحات میں رکھنے کی ہدایت کی۔ انہوں نے نرسنگ یونیورسٹی کے منصوبے کو جلد مکمل کرنے اور ضرورت پڑنے پر سینیٹری سروسز کو آؤٹ سورس کرنے پر بھی زور دیا تاکہ ہسپتال کی صفائی کو بین الاقوامی معیار کے مطابق یقینی بنایا جا سکے۔

اجلاس میں خواجہ سلمان رفیق، خواجہ عمران نذیر، چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری صحت، متعلقہ سینئر حکام اور PKLI کی انتظامیہ نے شرکت کی۔دریں اثناء وزیراعظم شہباز شریف نے امیر قطر شیخ تمیم بن حمد الثانی کو ٹیلی فون کیا اور عید الفطر کی مبارکباد دی۔ وزیراعظم نے قطر کے برادر عوام کے لیے نیک خواہشات کا بھی اظہار کیا۔ امیر قطر نے تہہ دل سے تہنیتی پیغام اور پاکستانی عوام کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ تعلقات کی بہترین حالت پر اطمینان کا اظہار کیا اور دونوں ممالک کے درمیان موجود مضبوط سیاسی اور اقتصادی تعاون کو آگے بڑھانے کا عزم کیا۔ دونوں رہنماؤں نے قریبی رابطہ برقرار رکھنے اور مشترکہ دلچسپی کے تمام امور پر مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا۔

وزیراعظم نے قطر کے امیر کو جلد دورہ پاکستان کی دعوت دی۔ امیر نے وزیراعظم کو قطر کے دورے کی دعوت بھی دی۔ شہباز شریف نے بحرین کے بادشاہ حمد بن عیسیٰ الخلیفہ کو بھی ٹیلی فون کر کے عید کی مبارکباد دی۔ انہوں نے بحرین کے برادر عوام کی مسلسل ترقی اور خوشحالی کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور اس بات کا اعادہ کیا کہ پاکستان بحرین کے ساتھ اپنے برادرانہ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے اور مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو مزید مضبوط بنانے کے عزم کا اظہار کیا۔ شہباز شریف نے بحرین کی جانب سے COVID-19 وبائی امراض کے دوران پاکستانی کارکنوں کی دیکھ بھال کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا۔ وزیر اعظم کی عید کی مبارکباد اور بحرین کے عوام کے لیے گرمجوشی کے جذبات کا جواب دیتے ہوئے، شاہ حمد بن عیسیٰ الخلیفہ نے وزیر اعظم شہباز شریف کو ان کے حالیہ انتخاب اور عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد دی۔ پاکستان کے ساتھ دوطرفہ تعاون کو وسیع اور گہرا کرنے کے لیے بحرین کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے، انہوں نے کہا کہ وہ اس مقصد کو آگے بڑھانے کے لیے وزیر اعظم کے ساتھ مل کر کام کرنے کے منتظر ہیں۔

شہباز شریف نے اپنے کویتی ہم منصب شیخ صباح خالد الحمد الصباح کو بھی ٹیلی فون کر کے عید کی مبارکباد دی۔ بات چیت کے دوران وزیراعظم نے اس پرمسرت موقع پر کویت کے برادر عوام کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ مبارکباد کا جواب دیتے ہوئے، وزیر اعظم شیخ صباح خالد الحمد الصباح نے بھی وزیر اعظم شہباز شریف کو بطور وزیر اعظم پاکستان منتخب ہونے پر مبارکباد دی۔ دوطرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے اپنے مشترکہ عزم کا اعادہ کرتے ہوئے دونوں رہنماؤں نے باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے کویت کی حکومت کی طرف سے کویت میں مقیم اور کام کرنے والے پاکستانیوں کی خصوصی دیکھ بھال پر وزیر اعظم کویت کا شکریہ ادا کیا۔ وزیراعظم نے کویت کے وزیراعظم کو جلد پاکستان کے دورے کی دعوت بھی دی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں