14

پی ٹی آئی کے ایم این ایز کو استعفوں کی تصدیق کے لیے پیش ہونا پڑے گا، اسپیکر

راجہ پرویز اشرف۔  تصویر: پی آئی ڈی
راجہ پرویز اشرف۔ تصویر: پی آئی ڈی

اسلام آباد: قومی اسمبلی کے اسپیکر راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے ایم این ایز کے استعفوں کی تصدیق کا عمل عمران خان سمیت انہیں خط لکھنے سے شروع ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہیں اپنے استعفوں کی تصدیق کے لیے ذاتی طور پر ان کے سامنے پیش ہونا ہوگا کیونکہ ان کے استعفے ہاتھ سے نہیں لکھے گئے ہیں جو کہ ایک قانونی تقاضا ہے۔

سابق وزیراعظم عمران خان اب بھی رکن قومی اسمبلی ہیں۔ انہیں ذاتی طور پر اپنے استعفے کی تصدیق کرنی ہوگی،” اشرف نے منگل کو پارلیمنٹ ہاؤس میں پارلیمانی رپورٹرز ایسوسی ایشن (PRA) کی ایگزیکٹو باڈی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا۔

انہوں نے کہا کہ مستعفی ہونے والے تمام ایم این ایز کو ان کے استعفوں کی تصدیق کے لیے خطوط لکھے گئے ہیں اور ان کے سامنے پیش ہونے کے بعد ہی ان کے استعفوں کی قسمت کا فیصلہ ہو گا۔ انہوں نے کہا، “قانون کہتا ہے کہ مستعفی ہونے والے ایم این ایز کو اپنے استعفے ہاتھ سے لکھنا ہوں گے اور وہ کسی دباؤ میں نہیں ہیں،” انہوں نے کہا۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی اصلاحات پر پارلیمانی کمیٹی کی تشکیل کا عمل شروع کر دیا گیا ہے اور پی ٹی آئی سمیت تمام پارلیمانی جماعتوں سے نام طلب کر لیے گئے ہیں۔

“پارلیمانی پارٹیوں سے چند نام موصول ہوئے ہیں اور میں نے ان پارلیمانی پارٹیوں کو یاددہانی بھیجنے کی ہدایت کی ہے جنہوں نے اپنے نام نہیں بھیجے ہیں۔ ہم اگلے انتخابی نتائج کو تمام جماعتوں کے لیے قابل قبول بنانے کے لیے انتخابی اصلاحات چاہتے ہیں،‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ انتخابی اصلاحات پر پارلیمانی کمیٹی 20 ایم این ایز اور 10 سینیٹرز پر مشتمل ہوگی۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نئے انتخابات کے وقت کا فیصلہ انتخابی اصلاحات کا عمل مکمل ہونے کے بعد کیا جائے گا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں