16

حکومت نے پیکنگ بھیج دی تو بہت بڑا نقصان ہو گا، عمران خان

اٹک: پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے جمعرات کو کہا کہ انہوں نے متعلقہ حلقوں کو آگاہ کر دیا ہے کہ اگر ’’سازش‘‘ کامیاب ہوئی تو ملکی معیشت ڈوب جائے گی، لیکن اس بارے میں کچھ نہیں کیا جا سکتا۔

اٹک میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ میں نے ان لوگوں سے بات کی جو سازش کو روک سکتے تھے اور اس وقت کے وزیر خزانہ شوکت ترین کو بھی ان سے بات کرنے کے لیے بھیجا لیکن یہ ایک بے سود مشق ثابت ہوئی۔

اپنی حکومت مخالف مہم کے بارے میں بات کرتے ہوئے، سابق وزیر اعظم نے کہا کہ اب یہ سیاست کی بات نہیں ہے بلکہ یہ ایک جہاد (مقدس جنگ) میں بدل چکی ہے، انہوں نے مزید کہا کہ وہ ملک پر “چوروں اور غلاموں” کی حکمرانی کو کبھی قبول نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ میں اس مقصد کے لیے جیل جانے اور مرنے کو بھی تیار ہوں لیکن میں امریکہ کا غلام بننا کبھی قبول نہیں کروں گا، انہوں نے مزید کہا کہ “تین کٹھ پتلیوں” (آصف زرداری، شہباز شریف اور مولانا فضل الرحمان) امریکہ کے ساتھ مل کر اپنی حکومت کے خلاف سازش کی۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ میں بیٹھ کر ہینڈلرز نے پاکستان میں حکومت کا تختہ الٹ دیا۔ اس لیے ہم اس سازش کے خلاف مہم جاری رکھیں گے جب تک کہ نئے انتخابات نہیں ہو جاتے۔

پی ایم ایل این کے سپریمو نواز شریف اور وزیر اعظم شہباز شریف کا حوالہ دیتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ‘ایک بھائی ملکی فوج کو گالی دیتا ہے، جب کہ دوسرا بوٹ لِکنگ کا سہارا لیتا ہے’۔ انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ پی ٹی آئی کی تحریک اس وقت تک جاری رہے گی جب تک نئی حکومت عام انتخابات کا اعلان نہیں کرتی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں