21

شیریں مزاری کے والد نے 4 ہزار کنال اراضی کا ریکارڈ تبدیل کرایا۔

پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری  تصویر: دی نیوز/فائل
پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری تصویر: دی نیوز/فائل

لاہور: ذرائع کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف پاکستان کی رہنما شیریں مزاری کے والد سردار عاشق مزاری نے اپنی 40 ہزار کنال اراضی کا ریکارڈ دھوکہ دہی سے تبدیل کرایا۔

ذرائع نے بتایا کہ موضع کچا، میانوالی میں جمہ بندی (زمین کی کارروائی) اور پرات سرکار (حقوق کا ریکارڈ) کو ریونیو حکام کے ساتھ مل کر تبدیل کیا گیا۔ یہ اس وقت اتنا مشکل نہیں تھا جب ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت نے زمینی اصلاحات متعارف کروائی تھیں۔

زمیندار اپنی مرضی کے پٹواریوں اور دیگر ریونیو اہلکاروں کو مقرر کرواتے تھے۔ ایسا ہی 1971 میں ہوا جب ریونیو حکام عاشق مزاری کی زمین کا ریکارڈ ان کے گھر لے گئے اور جعلی ریکارڈ بنایا۔ مختلف کمپنیاں قائم کی گئیں اور انہیں زمینیں منتقل کی گئیں۔

سردار عاشق مزاری ایک جاگیردار تھے جو تحصیل روجھان، ضلع راجن پور میں ہزاروں ایکڑ زمین کے مالک تھے۔ زمینی اصلاحات کے آغاز کے ساتھ ہی جاگیرداروں سے لی گئی زمینیں ہاریوں اور کرایہ دار کسانوں میں تقسیم کر دی گئیں۔

دو روز قبل اپنے ٹویٹ پیغام میں شیریں مزاری نے کہا تھا کہ وہ اس معاملے سے لاعلم ہیں۔

زمینی اصلاحات کے وقت میری عمر صرف سات سال تھی۔ میرے پاس 500 ایکڑ زمین بھی نہیں ہے 5000 ایکڑ کی کیا بات کروں۔ میں زمین کی فائلیں ڈھونڈ رہی ہوں،‘‘ اس نے کہا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں