17

نیپرا نے اپریل کے لیے ٹیرف میں 3.99 روپے کا اضافہ کر دیا۔

نیپرا نے اپریل کے لیے ٹیرف میں 3.99 روپے کا اضافہ کر دیا۔  تصویر: دی نیوز/فائل
نیپرا نے اپریل کے لیے ٹیرف میں 3.99 روپے کا اضافہ کر دیا۔ تصویر: دی نیوز/فائل

اسلام آباد: نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے اپریل 2022 کے لیے فیول چارجز ایڈجسٹمنٹ (ایف سی اے) کی مد میں منگل کو بجلی کی قیمت میں 3 روپے 99 پیسے فی یونٹ اضافہ کردیا۔

نیپرا نے اپریل 2022 کے ہیڈ ایف سی اے کے تحت بجلی کے نرخوں میں 3.99 روپے فی یونٹ اضافے کی جانچ پڑتال کی ہے جو بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں (DISCOS) کے بجلی صارفین پر ڈالنے کی صورت میں تقریباً 51 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ تاہم، بجلی کے نرخوں میں یہ اضافہ K-Electric کے صارفین اور لائف لائن صارفین پر لاگو نہیں ہوگا، مقامی میڈیا نے رپورٹ کیا۔

منگل کو نیپرا نے سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) کی درخواست پر چیئرمین نیپرا توصیف ایچ فاروقی کی سربراہی میں سماعت کی جس میں نیپرا کے ممبران رفیق احمد شیخ اور مقصود انور موجود تھے۔

اس سے قبل، کے الیکٹرک کے علاوہ تمام ڈسکوز کی جانب سے سی پی پی اے نے اس سے قبل نیپرا سے بجلی کے نرخوں میں 4.5 روپے فی یونٹ اضافے کی درخواست کی تھی اور کہا تھا کہ اپریل میں 10 روپے کی پیداواری لاگت پر مختلف ایندھن سے مجموعی طور پر 13.55 بلین یونٹ بجلی پیدا کی گئی۔ .66 فی کلو واٹ جبکہ اپریل 2022 کے لیے حوالہ لاگت 6.60 روپے فی یونٹ مقرر کی گئی تھی۔

سی پی پی اے کے مطابق ہائیڈل سورس سے پیدا ہونے والی بجلی 18.55 فیصد، کوئلہ 16.74 فیصد، فرنس آئل 12.07 فیصد، گیس 9.85 فیصد، ری گیسیفائیڈ لیکویفائیڈ نیچرل گیس (آر ایل این جی) 19.42 فیصد، نیوکلیئر 17.37 فیصد، ہوا سے پیدا ہونے والی گیس 9.8 فیصد، ونڈ گیس 3.2 فیصد اور اپریل 2022 کے مذکورہ مہینے میں شمسی 0.67 فیصد۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ نیپرا ضروری ڈیٹا کی تفصیلی جانچ پڑتال کے بعد کے الیکٹرک کے علاوہ ڈسکوز کے صارفین کے لیے اپریل کے ایف سی اے کے حوالے سے اپنا حتمی فیصلہ اور نوٹیفکیشن جاری کرے گا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں