19

صدر نے قومی اسمبلی کا بجٹ اجلاس 6 جون کو طلب کر لیا۔

قومی اسمبلی کا اندرونی منظر۔  تصویر: دی نیوز/فائل
قومی اسمبلی کا اندرونی منظر۔ تصویر: دی نیوز/فائل

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے آئین کے آرٹیکل 54 (1) کے تحت قومی اسمبلی کا بجٹ اجلاس 6 جون کو شام 4 بجے طلب کر لیا ہے۔

وزیر اعظم شہباز شریف ملک کو مالی بحران سے نکالنے کے لیے حکومت کے معاشی وژن سے پردہ اٹھانے کا امکان ہے۔

10 جون (جمعہ) کو پیش کیے جانے والے آئندہ بجٹ 2022-23 میں حکومت کی جانب سے سخت معاشی فیصلے کیے جانے کی توقع ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس کے دوران مرکزی اپوزیشن جماعت یعنی پی ٹی آئی کی عدم موجودگی میں مخلوط حکومت کو فرینڈلی اپوزیشن کا سامنا کرنے کا امکان ہے۔

پارلیمانی مبصرین کا خیال ہے کہ حکومت کے لیے قومی اسمبلی سے بجٹ کی منظوری حاصل کرنا آسان کام ہوگا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں