19

نیب نے 753 ملین ڈالر کرپشن کیس میں سابق چیئرمین واپڈا کو طلب کر لیا۔

سابق چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین۔  تصویر: دی نیوز/فائل
سابق چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین۔ تصویر: دی نیوز/فائل

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور نے جمعرات کو سابق چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین کو تربیلا ہائیڈرو پاور پراجیکٹ IV میں مبینہ بے ضابطگیوں پر شکایات کی تصدیق کے عمل میں طلب کیا جس سے قومی خزانے کو 753 ملین ڈالر کا نقصان پہنچا۔ کٹی

نیب لاہور نے سابق چیئرمین واپڈا کو ہدایت کی ہے کہ وہ 6 جون کو شکایت کی تصدیق کرنے والے افسر کے سامنے تمام متعلقہ دستاویزات کے ساتھ پیش ہو کر معاملے پر اپنا موقف پیش کریں۔

واضح رہے کہ سابق چیئرمین واپڈا مزمل حسین مئی 2022 میں اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئے تھے، اگست 2021 میں انہیں چیئرمین واٹر اینڈ پاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (واپڈا) کی مدت ملازمت میں 5 سال کی توسیع دی گئی۔

نیب نے ملزم کو اس شکایت پر نوٹس جاری کیا کہ اس نے تربیلا ہائیڈرو پاور پراجیکٹ IV پراجیکٹ میں بے ضابطگیوں کی وجہ سے قومی خزانے کو 753 ملین ڈالر کا نقصان پہنچایا۔

نیب کی جانب سے جاری نوٹس کے مطابق، جس کی کاپی دی نیوز کے پاس موجود ہے، واپڈا کے سابق چیئرمین مزمل کو مطلع کیا گیا ہے کہ اس بیورو میں اختیارات کے ناجائز استعمال، سرکاری فنڈز میں خورد برد کے الزامات پر شکایات کی جانچ پڑتال کا عمل جاری ہے۔ تربیلا ڈیم کا ایکسٹینشن-IV ہائیڈرو پاور پراجیکٹ “جس سے قومی خزانے کو 763 ملین ڈالر کا نقصان ہوا۔

اس سلسلے میں آپ کو 6 جون کو اپنا بیان ریکارڈ کرنے اور مندرجہ ذیل نکات کے بارے میں ایک جامع رپورٹ پیش کرنے کے لیے ذاتی طور پر حاضر ہونا ہوگا۔”

بیورو نے مزمل کو تربیلا IV ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے بریف کے ساتھ آنے کی ہدایت کی ہے۔ انہیں یہ بھی ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اختیار کردہ فنڈنگ ​​کے عمل، پی سی ون کے ساتھ کنٹریکٹ کی تشخیص اور پی سی ون میں بعد میں ہونے والی نظرثانی کے ساتھ ساتھ مجاز اتھارٹی سے انتظامی منظوریوں اور تکنیکی پابندیوں کی مکمل تفصیلات بھی سامنے لائیں۔

نیب لاہور نے سابق چیئرمین واپڈا کو مزید ہدایت کی کہ وہ اپنے ساتھ مجاز اتھارٹی سے تصدیق شدہ مسابقتی سرٹیفکیٹ اور مذکورہ منصوبے کی تنصیب/شروع کی مکمل تفصیلات لے کر آئیں۔

ذرائع کے مطابق شکایت کنندہ نے لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین کے خلاف اپنی شکایت میں الزام لگایا ہے کہ انہوں نے بطور چیئرمین واپڈا اپنے دور اقتدار میں اختیارات کا ناجائز استعمال کیا جس سے اربوں کا نقصان ہوا۔ یہ بھی الزام لگایا گیا کہ مزمل نے ٹھیکیداروں کو غلط ادائیگیاں کیں۔ شکایت کنندہ نے الزام لگایا کہ تربیلا ہائیڈرو پاور پروجیکٹ IV تکمیل کے قریب ہے لیکن اس کی فی یونٹ تعمیراتی لاگت ملک میں سب سے زیادہ ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں