16

پی ٹی آئی پنجاب ضمنی انتخابات میں حصہ لے گی، مارچ ملتوی

پی ٹی آئی پنجاب ضمنی انتخابات میں حصہ لے گی، مارچ ملتوی

اسلام آباد: ایک بڑے سیاسی اقدام میں، پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی کور کمیٹی نے اتوار کو مارچ کا فیصلہ ایک اور دن کے لیے موخر کرتے ہوئے پنجاب اسمبلی کے 20 حلقوں کے ضمنی انتخاب میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ پارٹی نے اپنے کارکنوں کو پارٹی سربراہ عمران خان کی گرفتاری کی صورت میں تیز ردعمل دینے کے لیے بھی خبردار کیا۔

یہ بات پی ٹی آئی کے وائس چیئرمین اور سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بنی گالہ میں عمران خان کی زیر صدارت کمیٹی کے طویل اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

عمران 26 مئی کو ‘حقیقی آزادی مارچ’ کو اچانک منسوخ کرنے کے دن سے وہاں رہنے کے بعد ہفتہ کو پشاور سے ہیلی کاپٹر پر بنی گالہ پہنچے تھے۔

قریشی نے کہا کہ کور کمیٹی نے تازہ ترین سیاسی صورتحال کے ساتھ ساتھ معاشی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا اور اشیائے خوردونوش کی بڑھتی ہوئی قیمتوں پر شدید تشویش کا اظہار کیا اور پنجاب حکومت کی جانب سے انتظامیہ اور پولیس کو مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کے لیے استعمال کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ -انتخابات ان ضمنی انتخابات کو صاف اور شفاف بنانا الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے۔ اگر الیکشن کمیشن ان ضمنی انتخابات کو شفاف بنانے میں ناکام دکھائی دیتا ہے تو مستقبل قریب میں ہونے والے عام انتخابات پر بڑا سوالیہ نشان لگ جائے گا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ عمران خان ضمنی انتخابات میں پارٹی ٹکٹوں کی تقسیم پر غور کے لیے پیر (آج) دوپہر ایک بجے پارلیمانی بورڈ کے اجلاس کی صدارت کریں گے۔ پی ٹی آئی کے ایم این ایز کے استعفوں پر انہوں نے نشاندہی کی کہ اسپیکر قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی ایم این ایز کو خطوط لکھے ہیں کہ وہ 6 جون سے 10 جون تک اسمبلی میں پیش ہوں اور استعفوں پر اپنا بیان ریکارڈ کریں۔ تاہم، انہوں نے کہا، “ہم نے اپنا استعفیٰ پیش کر دیا ہے۔ اس وقت کے پریذائیڈنگ آفیسر قاسم سوری نے یہ استعفے منظور کر کے نوٹیفکیشن کر دیا تھا اس لیے اب سپیکر قومی اسمبلی کے سامنے پیش ہونے کی ضرورت نہیں۔ پی ٹی آئی نے فیصلہ کیا ہے کہ پارٹی کا کوئی ایم این اے اسپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف کے سامنے پیش نہیں ہوگا۔

پی ٹی آئی کارکنوں کو متنبہ کرتے ہوئے، قریشی نے کہا کہ اگر انہیں میڈیا یا سوشل میڈیا کے ذریعے معلوم ہوتا ہے کہ اس “امپورٹڈ حکومت” نے عمران خان کو گرفتار کر لیا ہے، تو انہیں کسی فون کال یا واٹس ایپ میسج کا انتظار نہیں کرنا چاہیے، اور پرامن طریقے سے ردعمل کا اظہار کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی نے بجلی اور گیس کے نرخوں میں اضافے کے علاوہ پٹرولیم مصنوعات میں 60 روپے اضافے کا نوٹس لیا۔

انہوں نے کہا کہ جب سے اس تجربہ کار ‘مسلط حکومت’ نے اقتدار سنبھالا ہے، گھی کی قیمت 200 روپے تک بڑھ گئی ہے۔ پنجاب میں، جہاں سے وہ دوسرے صوبوں کو گندم سپلائی کرتا ہے، 20 کلو آٹے کا تھیلا 1600 روپے میں فروخت ہو رہا ہے۔ اشیائے خوردونوش کی قیمتیں بے قابو ہو رہی ہیں، ماہرین کا کہنا ہے کہ مہنگائی ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح کو چھونے جا رہی ہے،‘‘ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا۔

قریشی نے کہا کہ پنجاب، سندھ اور بلوچستان کے کسان نہروں کی بندش اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے پانی کے بحران کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے مارچ کرنے والوں کے خلاف کارروائی میں ملوث پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمات درج کیے جائیں گے۔

قریشی نے کہا کہ پی ٹی آئی کے سینیٹرز اس شمار پر سینیٹ کی متعلقہ قائمہ کمیٹیوں میں اپنا کردار ادا کریں گے اور آئی جی پی اسلام آباد اور دیگر پولیس افسران کو طلب کرنے پر زور دیں گے۔ قریشی نے مزید کہا کہ پنجاب میں سپیکر چوہدری پرویز الٰہی سے بھی اس سلسلے میں کارروائی کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔

انہوں نے الزام لگایا کہ تازہ ترین مردم شماری کی عدم موجودگی میں الیکشن کمیشن نے لوگوں کے ووٹ ایک حلقے سے دوسرے حلقے میں منتقل کیے ہیں اور اسے چیلنج کیا جائے گا۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں