16

این اے کل بی جے پی لیڈروں کے گستاخانہ ریمارکس پر بحث کرے گا۔

پاکستان کی قومی اسمبلی کا اندرونی منظر۔  تصویر: دی نیوز/فائل
پاکستان کی قومی اسمبلی کا اندرونی منظر۔ تصویر: دی نیوز/فائل

اسلام آباد: وزیر اعظم شہباز شریف نے سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف سے کہا ہے کہ وہ پیر کو حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی حرمت پر بحث کریں۔

ہفتہ کو ایک بیان میں، انہوں نے بی جے پی رہنماؤں کے گستاخانہ تبصروں کی مذمت کی اور کہا کہ ان ریمارکس سے دنیا بھر کے 1.25 بلین مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ قومی اسمبلی بھارت میں ہونے والے قابل مذمت واقعہ کے خلاف قرارداد پاس کرے۔ اس قرارداد سے دنیا کو واضح پیغام جائے گا کہ ’’ہم حضرت محمد (ص) کی حرمت کے لیے ہر قسم کی قربانی دینے کے لیے تیار ہیں‘‘۔

دریں اثنا، اشرف نے شہباز کی درخواست پر پیر کو قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس کے دوران فاشسٹ بی جے پی رہنماؤں کے تضحیک آمیز ریمارکس کے معاملے پر بات کرنے کا فیصلہ کیا۔

انہوں نے بحث کے لیے ایک گھنٹہ مختص کیا اور اپوزیشن کو اجلاس میں شرکت کی دعوت دی۔ انہوں نے کہا کہ یہ کسی سیاسی جماعت یا فرد کا نہیں بلکہ ایمان کا معاملہ ہے۔ اس معاملے پر بحث کے بعد بجٹ پر بحث ہوگی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں