11

پارلیمنٹ کی سیکیورٹی کمیٹی کو ٹی ٹی پی سے مذاکرات پر بریفنگ دی جائے گی۔

اسلام آباد: پارلیمانی کمیٹی برائے قومی سلامتی کو بدھ کی سہ پہر وزیراعظم ہاؤس میں ہونے والے اجلاس میں حکومت اور کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے درمیان مذاکرات میں پیشرفت پر بریفنگ دی جائے گی۔

پارلیمانی کمیٹی برائے قومی سلامتی (پی سی این ایس) کا اجلاس بدھ (آج) سہ پہر 3 بجے وزیراعظم ہاؤس میں ہوگا جس میں طالبان سے مذاکرات میں پیش رفت اور قومی سلامتی سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل ندیم احمد انجم بھی اجلاس میں شرکت کریں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈی جی آئی ایس آئی سینئر اراکین پارلیمنٹ کو حکومت اور طالبان کے درمیان ہونے والے مذاکرات پر بریفنگ دیں گے۔

سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف پی سی این ایس کی سربراہی کریں گے، جس میں این اے کی آفیشل ویب سائٹ کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف اور دیگر جماعتوں کے پارلیمانی رہنما بھی شامل ہیں، جن کی دونوں ایوانوں میں نمائندگی ہے۔

وزیر اعظم شہباز شریف اس وقت پی سی این ایس کے رکن بن گئے تھے، جب وہ قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف تھے۔ تاہم اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی کہ نئے اپوزیشن لیڈر راجہ ریاض احمد خان کو اجلاس میں مدعو کیا گیا ہے یا نہیں۔

پیپلز پارٹی کی قیادت نے مطالبہ کیا تھا کہ منتخب نمائندوں کو بھی آن بورڈ لیا جائے۔ وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری نے ٹویٹ کیا تھا کہ وہ اس معاملے پر اتحادی جماعتوں سے بھی رجوع کریں گے۔ حکومت کی جانب سے وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے جون کے پہلے ہفتے میں تصدیق کی تھی کہ ٹی ٹی پی کے ساتھ حکومتی سطح پر مذاکرات جاری ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹی ٹی پی کے ساتھ مذاکرات 2021 میں شروع ہوئے تھے اور یہ مذاکرات حکومتی سطح پر ہو رہے تھے۔ وزیر نے اس بات کی بھی تصدیق کی کہ افغان طالبان حکومت دونوں فریقوں کے درمیان ثالث کے طور پر کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سول اور فوجی نمائندے ٹی ٹی پی کے ساتھ مذاکرات کرنے والے پاکستانی فریق کا حصہ تھے، انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے ٹی ٹی پی کی طرف سے اعلان کردہ جنگ بندی کو سراہا ہے۔ صرف دو روز قبل افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا تھا کہ پاکستان اور ٹی ٹی پی کے درمیان مذاکرات مکمل ہو گئے ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں