20

وجاہت کے الزامات بے بنیاد اور بے ہودہ: شجاعت

چوہدری شجاعت حسین۔  تصویر: دی نیوز/فائل
چوہدری شجاعت حسین۔ تصویر: دی نیوز/فائل

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ق) کے صدر و سابق وزیراعظم چوہدری شجاعت حسین نے ہفتہ کے روز اپنے چھوٹے بھائی چوہدری وجاہت حسین کی جانب سے اپنے بیٹوں پر سابق صدر آصف علی زرداری سے ڈالر مانگنے کے الزامات کو بے بنیاد اور لغو قرار دے دیا۔

’’میں نے اپنے بیٹوں کی اس طرح پرورش نہیں کی اور وہ میری ہدایت پر چل رہے ہیں۔ میں انہیں ہمیشہ سچ بولنے اور وعدوں کی پاسداری کا مشورہ دیتا ہوں۔ انہوں نے میری ہدایت پر وزیر اعظم شہباز شریف کی حمایت میں ووٹ ڈالا اور کسی سے کوئی وزارت نہیں مانگی۔ انہوں نے کہا کہ سابق وزیر اعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی کامیابی کے بعد زرداری نے ہم سے ملاقات کی اور مبارکباد دی۔

انہوں نے کہا: “وجاہت نے کہا ہے کہ اگر ہم نے 30 جون تک پی ایم ایل این سے اتحاد ختم نہیں کیا تو وہ ایک نئی پارٹی بنائیں گے۔ پاکستان میں پہلے ہی سینکڑوں پارٹیاں ہیں اور اگر کوئی اور پارٹی بن گئی تو کیا فرق پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ وجاہت نے یہ بھی الزام لگایا کہ پی ایم ایل کیو کے سیکرٹری جنرل اور وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ نے “ہمارے خاندان کو تقسیم کر دیا ہے اور چیمہ کے بارے میں یہ بیان غیر اخلاقی اور جھوٹ پر مبنی ہے”۔

ایک روز قبل وجاہت حسین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے نئی پارٹی بنانے کا اعلان کیا تھا۔

وجاہت نے الزام لگایا کہ طارق بشیر چیمہ نے ان کے خاندان کو “تقسیم” کر دیا ہے، جبکہ شجاعت (ان کے بھائی) کو ان کے بیٹوں نے یرغمال بنا رکھا ہے۔

انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ شجاعت کے بیٹے سالک حسین “زرداری سے ڈالر مانگ رہے ہیں” جبکہ دعویٰ کیا کہ ان کا گجرات کی سیاست سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

وجاہت مسلم لیگ ق کے منحرف حسین الٰہی کے والد بھی ہیں جنہوں نے 8 جون کو پارٹی سے استعفیٰ دینے کا اعلان کیا تھا۔

الٰہی نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ وہ مسلم لیگ (ق) سے سیاسی سفر ختم کر رہے ہیں۔

“میں نے ہمیشہ یہ کہا ہے: میرا ملک میری ترجیح ہے۔”

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں