21

پاکستان کی سلامتی اور دفاع پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا، وزیراعظم

پاکستان کی سلامتی اور دفاع پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا، وزیراعظم

لاہور: وزیر اعظم شہباز شریف نے اتوار کے روز کہا کہ پاکستان کی سلامتی اور دفاع پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔

اپنی صدارت میں ملک میں امن و امان کی صورتحال سے متعلق اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے قانون نافذ کرنے والے اداروں (LEAs) پر اپنی کارکردگی کو بہتر بنانے پر زور دیا اور کہا کہ عوام کے تاثر کو تبدیل کرنے کا یہ واحد طریقہ ہے۔

اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز، وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ، ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی دوست محمد مزاری اور دیگر اعلیٰ حکام نے بھی شرکت کی، وزیراعظم کو ملک میں امن و امان کی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا گیا۔ جبکہ پنجاب کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

ملک سے دہشت گردی کے خاتمے اور اس حوالے سے درپیش خطرات کے بارے میں بریفنگ کے بعد وزیراعظم نے کہا کہ دہشت گردی اور دہشت گرد عناصر کے خلاف جنگ میں پوری قوم حکومت کے ساتھ ایک صفحے پر ہے۔

وزیر اعظم شہباز نے کہا کہ پاکستان کے عوام اپنی مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ حکومت ملک سے دہشت گردی کے مکمل خاتمے تک اپنی جدوجہد جاری رکھے گی۔

نیشنل ایکشن پلان میں صوبوں کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ صوبوں کی شمولیت کو بحال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ چار سالوں میں نیشنل ایکشن پلان میں صوبوں کے کردار کو نظر انداز کرنے سے ملک میں دہشت گردی میں اضافہ ہوا ہے۔

اجلاس میں وزیر اعظم شہباز شریف نے متعلقہ حکام کو ملک بھر میں عوام کے جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنانے کی ہدایت کی اور اسٹریٹ کرائم کی وارداتوں میں اضافے پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ عوام کی رائے صرف پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے حق میں ہو سکتی ہے جب وہ کارکردگی دکھائیں۔ وزیراعظم نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے ایکشن پلان کی تکمیل کے حوالے سے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی کو سراہا۔

دریں اثناء وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ حکومت نوجوانوں میں غیر قانونی منشیات کے استعمال کے بڑھتے ہوئے رجحان سے پیدا ہونے والے چیلنجز کو ختم کرنے کے لیے کوششیں کر رہی ہے۔

آج (26 جون) منائے جانے والے منشیات کے استعمال اور غیر قانونی اسمگلنگ کے خلاف عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان نے غیر قانونی منشیات سے پیدا ہونے والے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے “غیر متزلزل عزم” کا مظاہرہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم اس مقصد کے لیے بین الاقوامی اداروں کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان منشیات کے استعمال اور غیر قانونی اسمگلنگ کی روک تھام کے لیے تمام عالمی کنونشنز اور پروٹوکول پر دستخط کرنے والا ملک ہے۔

انہوں نے کہا کہ عام عوام خصوصاً نوجوان جو کہ پاکستان کی 60 فیصد سے زائد آبادی پر مشتمل ہے، مصنوعی ادویات کی آسانی سے دستیابی کی وجہ سے بڑے خطرے میں ہیں۔ وزیر اعظم شہباز نے نوجوانوں کو منشیات کے استعمال کے خطرات سے بچانے اور ان کی صحت و تندرستی کے تحفظ کے لیے اجتماعی کوششوں پر زور دیا۔

“منشیات کے استعمال اور غیر قانونی اسمگلنگ کے خلاف اس عالمی دن پر، ہم منشیات کے استعمال اور غیر قانونی اسمگلنگ کو فعال طور پر محدود کرنے کے اپنے عزم کا اعادہ کرتے ہیں۔ میں انسداد منشیات کی وزارت کو ہدایت دوں گا کہ وہ محفوظ، منشیات سے پاک کمیونٹیز کو فروغ دینے اور غیر قانونی منشیات کے چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے موثر اقدامات کرے۔”

وزیراعظم نے میڈیا اور سول سوسائٹی کی تنظیموں پر زور دیا کہ وہ منشیات سے پاک پاکستان کے حصول کے لیے شعور اجاگر کرنے میں اپنا کردار ادا کریں جبکہ حکومت اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ “منشیات کے استعمال کو شروع ہونے سے پہلے روکنا محفوظ اور صحت مند کمیونٹیز کو فروغ دینے کے لیے سب سے زیادہ سرمایہ کاری مؤثر، عام فہم طریقہ ہے۔”

دریں اثناء وزیراعظم کے سٹریٹجک ریفارمز کے سربراہ سلمان صوفی نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے پاکستان میں ہیلتھ کیئر ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ میں سٹریٹجک اصلاحات شروع کرنے کی ہدایت کی ہے۔

سلمان صوفی نے ایک بیان میں کہا کہ ابتدائی طور پر معذور شہریوں، دماغی فالج اور مصنوعی آلات کے لیے کام کرنے والی تنظیموں کی مدد کی جائے گی اور وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ان کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا۔

وزیر اعظم شہباز شریف سے وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار سید مرتضیٰ محمود نے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعظم سے ایم این اے چوہدری خالد جاوید وڑائچ نے بھی ملاقات کی اور ان کے حلقے میں ترقیاتی امور پر تبادلہ خیال کیا۔ دریں اثناء عون چوہدری نے بھی وزیراعظم سے ملاقات کی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں