18

بس کھائی میں گرنے سے 20 ہلاک

بس کھائی میں گرنے سے 20 ہلاک

کوئٹہ: بلوچستان کے ضلع شیرانی میں اتوار کو کوئٹہ جانے والی بس کھائی میں گرنے سے کم از کم 20 مسافر جاں بحق اور 10 زخمی ہوگئے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ایک اور زخمی ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا جس کے بعد حادثے میں مرنے والوں کی تعداد 20 ہو گئی۔ ریسکیو حکام کے مطابق مسافر بس راولپنڈی سے کوئٹہ جا رہی تھی کہ ضلع شیرانی کے علاقے دناسر کے قریب گہری کھائی میں جا گری ۔ ٹیلی ویژن فوٹیج میں امدادی کارکنوں کو خون میں لت پت مسافروں کی مدد کرتے ہوئے دکھایا گیا، جب کہ ایک اور منظر میں ملبے کو دیکھا جا سکتا ہے۔

پولیس نے لاشوں اور زخمیوں کو ژوب اور مغل کوٹ کے اسپتالوں میں منتقل کردیا۔ صدر مملکت عارف علوی نے المناک واقعے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ کا اظہار کیا اور مرحومین کے لیے دعائے مغفرت کی۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے بلوچستان بس حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے زخمیوں کو فوری اور بہترین طبی امداد فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

وزیراعلیٰ بلوچستان قدوس بزنجو نے افسوسناک واقعے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے حکام کو حکم دیا کہ ژوب کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کی جائے اور زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کی جائیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے بھی حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دکھ کا اظہار کیا اور جاں بحق افراد کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں