24

نیب کے چھ ڈی جیز کے بڑے پیمانے پر تبادلے

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو (نیب) کے قائم مقام چیئرمین ظاہر شاہ نے پیر کو نیب راولپنڈی، لاہور، ملتان اور سکھر کے علاقائی دفاتر میں ڈائریکٹر جنرلز کے تقرر و تبادلے کے احکامات جاری کر دیئے۔

راولپنڈی نیب کے ڈی جی عرفان نعیم منگی اور لاہور نیب کے ڈی جی سلیم شہزاد کو بالترتیب راولپنڈی نیب اور لاہور نیب سے تبدیل کر کے نیب ہیڈ کوارٹرز میں تعینات کر دیا گیا۔

پیر کو جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق قائم مقام چیئرمین نیب نے عرفان نعیم منگی کے ڈی جی نیب راولپنڈی کے عہدے سے تبادلے کی منظوری دے دی اور انہیں نیب ہیڈ کوارٹرز کے ٹریننگ اینڈ ریسرچ ڈویژن میں تعینات کر دیا اور ان کی جگہ فرمان اللہ جو اس وقت ڈی جی نیب بلوچستان ہیں تعینات کر دیا گیا ہے۔ ڈی جی نیب راولپنڈی تعینات۔

عرفان نعیم منگی اس تحقیقاتی ٹیم کی قیادت کر رہے تھے جو جعلی بینک اکاؤنٹس، ایل این جی اسکینڈل اور دیگر کئی میگا کرپشن کیسز کے ہائی پروفائل کرپشن کیسز کی تحقیقات کر رہی تھی۔ عرفان نعیم ناگی سابق چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کے دور میں ڈی جی نیب راولپنڈی تعینات تھے۔

ڈی جی نیب لاہور سلیم شہزاد کو ان کے موجودہ عہدے سے تبدیل کرکے ڈائریکٹر جنرل آگاہی اور روک تھام ڈویژن نیب ہیڈ کوارٹرز میں تعینات کیا گیا ہے اور ان کی جگہ مرزا سلطان محمد سلیم جو اس وقت ڈی جی نیب سکھر کے طور پر خدمات انجام دے رہے ہیں کو ڈی جی نیب لاہور تعینات کیا گیا ہے۔

سلیم شہزاد رواں سال اپریل میں نیب ہیڈ کوارٹرز سے واپس لاہور نیب کے ڈی جی کے عہدے پر تعینات ہوئے جہاں وہ گزشتہ سال دسمبر میں تعینات ہوئے تھے۔ اس سے قبل انہیں ڈی جی نیب لاہور کے عہدے سے تبدیل کر دیا گیا تھا جہاں انہوں نے 2017 سے 2021 تک چار سال خدمات انجام دیں۔

مسعود عالم خان جو اس وقت نیب ہیڈ کوارٹرز میں ڈی جی نیب آپریشنز ڈویژن ہیں کو ڈی جی نیب سکھر تعینات کر دیا گیا ہے۔ ڈی جی نیب (او پی ایس) ہیڈ کوارٹر نعمان اسلم کو ڈی جی نیب بلوچستان تعینات کر دیا گیا ہے۔

گزشتہ روز نیب کی جانب سے اعلیٰ افسران میں ردوبدل کے بعد الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ افسران نے نیب میں تبادلوں اور تقرریوں کا نوٹس لیا تھا تاہم بعد ازاں ای سی پی کے ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ افسران نے نوٹس واپس لے لیا۔ نیب میں تقرریاں اور تبادلے

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں