23

اینکر پرسن عمران ریاض اٹک سے گرفتار

عمران ریاض خان کو پنجاب پولیس نے حراست میں لینے سے پہلے۔  -اسکرین گریب
عمران ریاض خان کو پنجاب پولیس نے حراست میں لینے سے پہلے۔ -اسکرین گریب

لاہور: جیو نیوز کے مطابق اٹک پولیس نے منگل کو صحافی اور اینکر پرسن عمران ریاض خان کو اٹک سے گرفتار کر لیا۔

پولیس نے میڈیا آؤٹ لیٹ کو بتایا کہ عمران ریاض خان کے خلاف اٹک میں فرسٹ انفارمیشن رپورٹ (ایف آئی آر) درج کرائی گئی ہے۔ اینکر پرسن کے وکیل نے بتایا کہ پنجاب بھر میں ان کے موکل کے خلاف غداری کے 17 مقدمات درج ہیں جب کہ وہ پولیس کے خلاف توہین عدالت کا مقدمہ بھی درج کر رہے ہیں۔

پولیس کے مطابق عمران ریاض خان کو تھانے منتقل کیا جا رہا تھا۔ پنجاب کے وزیر قانون ملک احمد خان نے کہا کہ عمران ریاض خان کو پنجاب کے دائرہ اختیار میں گرفتار کیا گیا ہے، یہ تاثر غلط ہے کہ انہیں اسلام آباد سے گرفتار کیا گیا ہے۔

گرفتاری کے بعد پی ٹی آئی رہنماؤں بشمول چیئرمین عمران خان، فواد چوہدری، اسد عمر، شہباز گل اور دیگر نے صحافی کی حمایت میں آوازیں بلند کیں اور اس فعل کی مذمت کی۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے ٹویٹر پر لکھا، “میں آج رات پنجاب پولیس کے ہاتھوں عمران ریاض خان کی من مانی گرفتاری کی شدید مذمت کرتا ہوں۔” گرفتاری سے قبل اپنے ویڈیو بیان میں عمران ریاض خان کا کہنا تھا کہ مجھے اسلام آباد ٹول پلازہ پر اس وقت گرفتار کیا گیا جب میں ضمانت کے لیے اسلام آباد آرہا تھا، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے مجھے گرفتار نہ کرنے کا حکم دیا ہے۔

دوسری جانب صوبائی وزیر قانون ملک احمد خان نے کہا ہے کہ عمران ریاض خان کو اٹک اور راولپنڈی ڈویژن سے گرفتار کیا گیا، انہوں نے مزید کہا کہ یہ غلط ہے کہ انہیں اسلام آباد سے گرفتار کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خلاف پنجاب میں مقدمات درج ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں