17

LHC کا کہنا ہے کہ یہ اہم معاملہ ہے، ایک بار اور ہمیشہ کے لیے فیصلہ کیا جانا چاہیے۔

لاہور: لاہور ہائی کورٹ نے جمعرات کو درخواست گزار کو سابق وزیراعظم عمران خان اور پی ٹی آئی رہنما یاسمین راشد کی سوشل میڈیا پر ریاستی اداروں کے خلاف مبینہ مہم چلانے کے خلاف درخواست میں ترمیم کرنے کا حکم دے دیا۔

مقامی میڈیا نے رپورٹ کیا کہ عدالت نے مشاہدہ کیا کہ ترمیم شدہ پٹیشن دائر کرنے کے بعد معاملہ پانچ رکنی بنچ کو بھیجا جائے گا۔ عدالت نے نوٹ کیا کہ یہ ایک اہم معاملہ ہے اور اس کا ایک بار اور ہمیشہ کے لیے فیصلہ ہونا چاہیے۔

عدالت نے مشاہدہ کیا کہ درخواست کے مواد سے لگتا ہے کہ یہ ایک خاص فریق کے خلاف ہے جبکہ اس کی نوعیت عمومی ہونی چاہیے۔

جسٹس ساجد محمود سیٹھی نے یہ احکامات میاں داؤد ایڈووکیٹ کی وساطت سے شہری اختر علی کی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے دیے۔

قبل ازیں درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کے روبرو دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی رہنماؤں نے اپنی حکومت کے خاتمے کے بعد سوشل اور الیکٹرانک میڈیا پر ریاستی اداروں کے خلاف مہم شروع کر رکھی ہے۔ انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ حکام کو اپنی قانونی ذمہ داریاں ادا کرنے کی ہدایت کی جائے اور اداروں کے خلاف بدنیتی پر مبنی مہم چلانے میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کی جائے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں