18

کرم میں تین فوجی شہید

اس نامعلوم تصویر میں سیکورٹی فورسز سرچ آپریشن کر رہی ہیں۔  - آئی ایس پی آر/فائل
اس نامعلوم تصویر میں سیکورٹی فورسز سرچ آپریشن کر رہی ہیں۔ – آئی ایس پی آر/فائل

راولپنڈی: پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے منگل کو بتایا کہ بین الاقوامی سرحد کے پار افغانستان کے اندر سے دہشت گردوں کی فائرنگ سے ضلع کرم میں پاک فوج کے 3 جوان شہید ہوگئے۔

افغانستان کے اندر سے دہشت گردوں نے ضلع کرم کے علاقے خرلاچی کے جنرل علاقے میں پاکستانی فوجیوں پر فائرنگ کی۔ فوجیوں نے مناسب انداز میں جواب دیا۔

مصدقہ انٹیلی جنس اطلاعات کے مطابق فوجیوں کی فائرنگ سے دہشت گردوں کو بھاری جانی نقصان پہنچا۔ تاہم فائرنگ کے تبادلے کے دوران کرک کے رہائشی 32 سالہ نائیک محمد رحمان، جمرود خیبر کے رہائشی 34 سالہ نائیک معایز خان اور درگئی مالاکنڈ کے رہائشی 27 سالہ سپاہی عرفان اللہ نے بہادری سے لڑتے ہوئے شہادت کو گلے لگا لیا۔ .

آئی ایس پی آر کے بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان دہشت گردوں کی جانب سے پاکستان کے خلاف سرگرمیوں کے لیے افغان سرزمین کے استعمال کی مذمت کرتا ہے اور توقع کرتا ہے کہ افغان حکومت مستقبل میں ایسی سرگرمیوں کی اجازت نہیں دے گی۔

آئی ایس پی آر نے کہا کہ پاک فوج دہشت گردی کی لعنت کے خلاف پاکستان کی سرحدوں کے دفاع کے لیے پرعزم ہے اور “ہمارے بہادر سپاہیوں کی ایسی قربانیاں ہمارے عزم کو مزید مضبوط کرتی ہیں”۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں