19

PNSC کے ذریعے خریدے گئے کارگو جہاز میں خرابی کا پتہ چلا

کراچی: پاکستان نیشنل شپنگ کارپوریشن (PNSC) کی جانب سے حال ہی میں 8 ارب روپے خرچ کر کے خریدے گئے دو کارگو جہازوں میں سے ایک میں ایک بڑی خرابی کا پتہ چلا ہے، بدھ کو مقامی میڈیا نے رپورٹ کیا۔

پی این ایس سی نے حال ہی میں 8 ارب روپے خرچ کر کے دو کارگو جہاز ‘سرگودھا’ اور ‘مردان’ گزشتہ سال خریدے تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سرگودھا کا ’آئل پمپنگ سسٹم‘ بوسیدہ نکلا۔ بڑی خرابی کے بعد کارگو جہاز خام تیل کا ذخیرہ پورٹ قاسم تک پہنچانے میں ناکام رہا، جو پیر کو طے تھا۔ یہ بات سامنے آئی کہ سرگودھا کا جہاز بندرگاہ کے بیرونی چینل پر تین دن تک مرمتی کام کرتا رہا۔ بعد ازاں جہاز بیرونی لنگر انداز سے پورٹ قاسم کے لیے روانہ ہوا۔

ذرائع نے بتایا کہ پی این ایس سی نے اکتوبر میں دوسرے کارگو جہاز مردان کی ڈرائی ڈاکنگ کا فیصلہ کیا ہے۔ بیرونی ممالک میں ڈرائی ڈاکنگ یا بنیادی سروسنگ کے لیے کروڑوں کے اخراجات کی ضرورت ہوتی ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ مزید دو بحری جہاز خیرپور اور بولان، جو کئی سال پہلے خریدے گئے تھے، کو ڈرائی ڈاکنگ کے لیے نہیں بھیجا گیا۔ دریں اثناء سینیٹ کی قائمہ کمیٹی اور میری ٹائم وزارت کی سفارش پر پی این ایس سی کی جانب سے خریدے گئے 14 سال پرانے جہازوں کے معاملے کی تحقیقات کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزارت سمندری امور کے حکام کے مطابق معاملے کی تحقیقات وزیر اعظم کی انکوائری کمیٹی کرے گی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں