26

تجارتی اداروں کے عہدیداروں کی مدت میں دو سال کی توسیع کر دی گئی۔

کراچی: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے بدھ کو ٹریڈ آرگنائزیشن (ترمیمی) بل 2022 پر دستخط کر دیے، جس میں ایف پی سی سی آئی سمیت تمام تجارتی تنظیموں اور چیمبرز کے عہدیداروں کی مدت ملازمت میں دو سال کی توسیع کر دی گئی۔

قومی اسمبلی اور سینیٹ سے منظوری کے بعد صدر علوی نے ترمیم شدہ بل پر دستخط کر دیے جس سے یہ ملک میں قابل عمل ہو گیا۔ مزید برآں، ترمیم کے بعد ایف پی سی سی آئی سمیت تمام تجارتی تنظیموں اور چیمبرز کے عہدیداروں کی مدت میں دو سال کا اضافہ کر دیا گیا ہے۔

بل پر دستخط کے بعد عرفان اقبال شیخ 2023 کے آخر تک ایف پی سی سی آئی کے صدر رہیں گے۔واضح رہے کہ ایف پی سی سی آئی کے عہدیداران 2014 سے بل میں ترمیم کے لیے کوششیں کر رہے تھے کیونکہ ان کے مطابق ایک کسی بھی پالیسی کے نفاذ کے سلسلے میں عہدیداروں کی سال کی مدت ناکافی تھی۔

ایف پی سی سی آئی کے نائب صدر شبیر حسن منشا نے بل کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ یہ حکومت کی طرف سے تاجر برادری کو دیا گیا ایک تحفہ ہے، انہوں نے مزید کہا کہ اس فیصلے سے پالیسیوں پر عمل درآمد میں آسانی ہوگی۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ حکومت میں موجود اور اپوزیشن میں اکثریت والوں نے بل کی حمایت کی لیکن بعض عناصر نے سیاسی بنیادوں پر بل کی مخالفت کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ عہدے دار دسمبر 2023 تک اپنی مدت پوری کریں گے۔

ذرائع کے مطابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے منگل (یکم نومبر) کو بل میں ترمیم پر دستخط کیے اور اس کی کاپی وزیراعظم ہاؤس کو بھجوا دی، جب کہ وزارت تجارت کو بھی بل کی کاپی موصول ہو گئی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں