13

ڈار نے ’شٹل ڈپلومیسی‘ کا پہلا دور مکمل کر لیا

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر محمد اسحاق ڈار نے معیشت میں نمایاں بہتری لانے کے لیے حکومت کے زیر غور اقدامات پر اتفاق رائے پیدا کرنے کے لیے اپنی ’’شٹل ڈپلومیسی‘‘ کا پہلا دور مکمل کرلیا۔

یہ اقدامات اگلے مہینے کے پہلے ہفتے میں شروع ہو جائیں گے۔ وزیر جس نے پہلی بار پی ڈی اے کے صدر فضل الرحمان اور حکمران اتحاد کے دیگر رہنماؤں سے اپنی مشاورت کے حوالے سے ملاقات کی، اس عمل کے ابتدائی دور کا اختتام جمعہ کو صدر عارف علوی سے ملاقات کے ساتھ ہوا۔

باخبر سیاسی ذرائع نے دی نیوز کو جمعہ کو بتایا کہ سینیٹر ڈار نے اپنے مکالموں کے ساتھ نئے آرمی چیف کی تقرری پر بھی تبادلہ خیال کیا کیونکہ حکومت نے دیگر تمام معاملات کو پیچھے چھوڑتے ہوئے اگلے ماہ کے پہلے ہفتے سے اپنی پوری توجہ معیشت پر دینے کا منصوبہ بنایا ہے۔

معیشت کی بہتری کی مہم کے تناظر میں سیاسی بدامنی اور عدم استحکام پیدا کرنے کی کوششوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

ذرائع نے بتایا کہ حکومت معیشت کی خاطر ملک میں امن و امان کی بحالی کے لیے سخت اقدامات اٹھانے میں ہچکچاہٹ محسوس نہیں کرے گی۔

صدر کو حکومت کے منصوبوں خصوصاً معیشت کے حوالے سے پہلے ہی آگاہ کر دیا گیا ہے اور انہیں اپنے سیاسی دوستوں تک پیغام پہنچانے کا کام سونپا گیا ہے۔

سینیٹر محمد اسحاق ڈار نے پارٹی کے قائد نواز شریف اور وزیر اعظم شہباز شریف سمیت مسلم لیگ (ن) کی قیادت کو اپنی سفارت کاری کے نتائج کی اطلاع دی ہے۔

دریں اثنا، وزیر اعظم شہباز شریف، جو کہ جب سے انہوں نے عہدہ سنبھالا ہے، اپنا جمعہ لاہور میں گزار رہے ہیں، نے اس ہفتے لاہور نہ جانے کا انتخاب کیا کیونکہ وہ گزشتہ ہفتے کوویڈ 19 میں مبتلا ہو گئے تھے۔

ذرائع نے عندیہ دیا کہ ان کے کورونا ٹیسٹ آج (ہفتہ) کو کیے جائیں گے اور منفی نتائج آنے کی صورت میں انہیں اسی روز لاہور روانہ کیا جائے گا۔

اگر وہ لاہور جانے کا انتخاب کرتے ہیں تو وہ اتوار کی شام وفاقی دارالحکومت واپس آجائیں گے۔

وہ یہاں پی ڈی ایم رہنماؤں کے اجلاس میں شرکت کریں گے جو سکھر سے واپسی کے بعد اس کے صدر فضل کی طرف سے بلایا جائے گا۔ ذرائع نے مزید کہا کہ وہ اگلے ہفتے کے اوائل میں حکومتی اتحاد کے بعض اہم شخصیات کے ساتھ کچھ دیگر اہم ملاقاتیں بھی کریں گے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں