22

پنجاب میں ماحولیاتی ایمرجنسی نافذ

وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی۔  دی نیوز/فائل
وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی۔ دی نیوز/فائل

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے منگل کو لاہور اور دیگر شہروں میں اسموگ کو کم کرنے کے لیے ماحولیاتی ایمرجنسی نافذ کر دی، جسے آفت قرار دے دیا گیا ہے۔

“پنجاب بھر میں فصلوں کی باقیات کو جلانے پر پابندی ہے،” وزیراعلیٰ نے کہا اور سموگ کو کم کرنے کے لیے بنائے گئے پلان پر عمل درآمد کا حکم دیا۔ انہوں نے کہا کہ سموگ کا سبب بننے والے عوامل پر قابو پانے کے لیے اقدامات کیے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ ای پی ڈی، ٹرانسپورٹ اور انتظامی افسران فیلڈ میں جائیں کیونکہ سموگ کو کم کرنے کے لیے جاری ایس او پیز پر عمل درآمد میں کسی قسم کی ناکامی کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ فصلوں کی باقیات کو آگ لگانے والوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی کی جائے جبکہ سموگ پھیلانے والی گاڑیوں کے خلاف بھی قانونی کارروائی جاری رکھی جائے۔

اینٹی سموگ سکواڈ شہر میں سموگ پھیلانے والی گاڑیوں کو باقاعدگی سے چیک کرے۔ اسکواڈ کو لاہور شہر کے داخلی راستوں پر گاڑیوں کی چیکنگ کو یقینی بنانا چاہیے، انہوں نے مزید کہا کہ کسانوں کو فصل کی باقیات کو تلف کرنے کے لیے جدید ہارویسٹر “ہیپر سیڈ” فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے نتیجہ اخذ کیا کہ تمام اینٹوں کے بھٹوں کی زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقلی کو بھی یقینی بنایا جائے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں