27

سپریم کورٹ نے بتایا کہ 9,133 لاپتہ افراد میں سے 241 مردہ پائے گئے۔

اسلام آباد: لاپتہ افراد سے متعلق کمیشن کی مرتب کردہ رپورٹ جمعرات کو سپریم کورٹ میں جمع کرادی گئی۔

رپورٹ کے مطابق نومبر کے آخر تک لاپتہ افراد کمیشن کو کل 9 ہزار 133 شکایات موصول ہوئیں۔

گزشتہ ماہ نومبر کے دوران لاپتہ افراد کمیشن کو مزید 101 کیسز موصول ہوئے اور کیسز کی کل تعداد 9,133 ہوگئی۔

سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ کمیشن نے مجموعی طور پر 5,574 مقدمات حل کیے اور اب تک 3,743 لاپتہ افراد کو بازیاب کرایا گیا ہے، جن میں نومبر کے مہینے میں 81 شامل ہیں۔

مجموعی طور پر لاپتہ قرار دیے گئے 241 افراد کی لاشیں موصول ہوئیں، جب کہ 974 افراد حراست میں ہیں اور 616 افراد جنہیں لاپتہ قرار دیا گیا ہے، اس وقت جیلوں میں بند ہیں۔

مزید برآں، سپریم کورٹ کو بتایا گیا کہ 30 نومبر تک لاپتہ افراد کے مجموعی طور پر 2,207 مقدمات زیر التوا ہیں۔

حکومت پاکستان کی جانب سے 2011 میں جبری گمشدگیوں پر انکوائری کمیشن قائم کیا گیا تھا جس نے اپنے قیام سے اب تک 8,500 لاپتہ افراد کی تصدیق کی تھی۔ ان میں سے ایک تہائی (3,285) وطن واپس آچکے ہیں، کمیشن نے مارچ 2022 میں اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں کہا تھا۔ کمیشن نے 6,214 مقدمات کو نمٹا دیا ہے، جب کہ 2,249 ابھی زیر تفتیش ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں