29

سابق وزیر کے گھر پر ایک بار پھر دستی بم سے حملہ

پشاور: سابق صوبائی وزیر اور تاجر کے گھر پر گزشتہ دو دنوں میں دوسری بار دستی بم سے حملہ کیا گیا۔

کیپٹل سٹی پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ گلبہار میں سابق صوبائی وزیر اور تبلیغی جماعت کے سینئر رکن حاجی محمد جاوید کے زیر تعمیر مکان پر دستی بم حملے میں کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا۔

اہلکار نے بتایا کہ سینئر پولیس اہلکار جائے وقوعہ پر پہنچ گئے جبکہ بم ڈسپوزل ماہرین نے موقع سے شواہد اکٹھے کئے۔

حاجی جاوید کے گھر پر چند روز قبل دستی بم سے حملہ کیا گیا تھا۔ اس واقعہ میں بھی کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا۔ کئی ماہ قبل ان کے گھر پر بھی حملہ ہوا تھا۔

گزشتہ چند ماہ کے دوران پشاور اور صوبے کے دیگر اضلاع میں گھروں، حجروں اور فیکٹریوں پر دستی بم پھینکے جانے کے متعدد واقعات ہوئے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ سبھی نہیں بلکہ زیادہ تر متاثرین وہ تھے جنہیں نامعلوم گروپس کی جانب سے واٹس ایپ نمبروں پر بھتہ کی کالیں موصول ہوئی تھیں۔ کچھ واقعات کا تعلق بھتہ خوری سے نہیں تھا۔

ایک ذریعے نے بتایا کہ زیادہ تر دستی بم حملے متاثرین کو خوفزدہ کرنے کے لیے کیے جاتے ہیں۔

صنعتکاروں، تاجروں، سیاست دانوں، ٹھیکیداروں اور دیگر خوشحال لوگوں کی ایک بڑی تعداد کو کال کرنے کے بعد، پچھلے کچھ عرصے سے گھروں پر زیادہ حملے ہو رہے ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں