16

تحائف عمران نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات میں اپنے پاس رکھے، پی ٹی آئی کا دعویٰ

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات فرخ حبیب نے جمعرات کو کہا کہ سابق وزیراعظم نے چند تحائف پیسے دے کر حاصل کیے تھے۔

ایک ویڈیو پیغام میں پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ کابینہ ڈویژن کی ایک آزاد کمیٹی ہے جو بیرون ممالک سے ملنے والے تحائف کی قیمت کا تعین کرتی ہے اور مقررہ قواعد کے تحت ایک مخصوص رقم ادا کرنے کے بعد تحفے کو اپنے پاس رکھا جا سکتا ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ عمران نے جو تحائف حاصل کیے ان کے اثاثوں کی تفصیلات میں ذکر تھا اور انہوں نے کچھ نہیں چھپایا۔

انہوں نے ذکر کیا کہ عمران کو اپنے کرکٹ کیریئر کے دوران جو پلاٹس ملے، وہ انہوں نے شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال کو عطیہ کر دیے۔

عمران کے ساڑھے تین سالہ دور کا پی ایم ایل این کے سپریمو نواز شریف اور پی پی پی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری سے موازنہ کرتے ہوئے حبیب نے کہا کہ زرداری نے توشہ خانہ سے بی ایم ڈبلیو کار لی اور نواز شریف کو مرسڈیز کار ملی، جب کہ یوسف رضا گیلانی نے ہار گھر لے گئے۔ انہوں نے کہا کہ نواز دور میں توشہ خانہ کی معلومات کو کلاسیفائیڈ قرار دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ان دونوں جماعتوں کا 40 سالہ دور حکومت میں ان کے خلاف مقدمات کی بھرمار ہے۔ انہوں نے آصف زرداری کے خلاف اومنی گروپ کیس، سرے پیلس کیس، کوٹیکنا، آبدوز، پاپڑ والا، پھلودے والا کیسز کا نام لیا۔

نواز شریف کے خلاف انہوں نے حدیبیہ پیپر ملز کیس کا نام لیا۔ لندن پراپرٹی کیس؛ 16 ارب روپے کا رمضان شوگر ملز کیس۔ انہوں نے مقصود چپراسی اور 7.5 ارب روپے کی ٹیلی گرافک ٹرانسفر (TTs) کو بھی یاد کیا جو مبینہ طور پر شریف خاندان سے منسلک تھے۔

فرخ نے کہا کہ یہ لوگ اب عمران خان کے خلاف فرضی مہم چلا رہے ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ

کابینہ نے پی ٹی آئی چیئرمین کے خلاف میڈیا پر مہم چلانے کے لیے ٹیکس دہندگان کے 2 ارب روپے وزارت اطلاعات و نشریات کو دیے ہیں۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں