20

خیبرپختونخوا حکومت نے گورنر کو ہیلی کاپٹر فراہم کرنے سے انکار کردیا۔

25 مئی 2022 کو صوابی میں ایک احتجاجی ریلی کی قیادت کرنے کے لیے پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان (سی) کی نمائندہ تصویر ہیلی کاپٹر پر پہنچی۔ — اے ایف پی
25 مئی 2022 کو صوابی میں ایک احتجاجی ریلی کی قیادت کرنے کے لیے پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان (سی) کی نمائندہ تصویر ہیلی کاپٹر پر پہنچی۔ — اے ایف پی

پشاور: خیبرپختونخوا (کے پی) حکومت نے اتوار کو گورنر غلام علی کو ڈیرہ اسماعیل خان کے دورے کے لیے ہیلی کاپٹر فراہم کرنے سے انکار کردیا۔

کے پی کے گورنر نے کے پی حکومت سے ہیلی کاپٹر مانگا لیکن حکومت نے سرکاری ہیلی کاپٹر قابل استعمال نہ ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے معذرت کرلی۔

کے پی حکومت کا کہنا ہے کہ دوسرا ہیلی کاپٹر وزیراعلیٰ کے کسی بھی وقت ہنگامی دوروں کے لیے رکھا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ کے پی حکومت کے انکار کے بعد گورنر غلام علی بذریعہ سڑک ڈی آئی خان پہنچ گئے۔ خیبرپختونخوا حکومت پہلے بھی دو بار گورنر کو ہیلی کاپٹر فراہم کرنے سے انکار کر چکی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گزشتہ کئی سالوں سے کے پی حکومت کا ہیلی کاپٹر گورنر ہاؤس میں اترتا رہتا ہے۔

صوبائی اسمبلی نے سرکاری ہیلی کاپٹر کے استعمال کے بل کی منظوری دے دی ہے اور اسے دستخط کے لیے گورنر کو بھیج دیا گیا ہے۔ بل کے مطابق 2008 سے سرکاری ہیلی کاپٹر کے استعمال کو قانونی حیثیت دی گئی ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں